پی ٹی آئی نے پہلے سال بلدیاتی انتخابات نہ کرانے کی غلطی کرکے نقصان اٹھایا، فواد چوہدری

ویب ڈیسک  منگل 28 ستمبر 2021
پی ٹی آئی کو دباؤ میں آکر سندھ کو 11 سو ارب روپے اضافی دینے پڑے، فواد چوہدری فوٹو: فائل

پی ٹی آئی کو دباؤ میں آکر سندھ کو 11 سو ارب روپے اضافی دینے پڑے، فواد چوہدری فوٹو: فائل

 اسلام آباد: وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ اگر ہم پی ٹی آئی حکومت کی ایک غلطی دیکھیں جس کا ہمیں نقصان ہوا وہ پہلے سال میں لوکل گورنمنٹ الیکشن نہ کرانا تھا۔

اسلام آباد میں منعقدہ تقریب سے خطاب کے دوران فواد چوہدری نے کہا کہ طویل عرصے سے میرا تعلق لوکل کونسلز سے ہے، گورننس سب سے اہم ایشو ہے، عمران خان پہلے دن سے مانتے ہیں کہ مضبوط لوکل گورنمنٹ کے بغیر ملک کا نظام درست نہیں ہو سکتا، اگر ہم پی ٹی آئی حکومت کی ایک غلطی دیکھیں جس کا ہمیں نقصان ہوا وہ پہلے سال میں لوکل گورنمنٹ الیکشن نہ کرانا تھا۔ ہمارے بڑے شہروں میں ٹیکسیشن کا کوئی نظام نہیں، عوام کو ایک باا ختیار لوکل گورنمنٹ سسٹم کی ضرورت ہے، پنجاب کا جو لوکل گورنمنٹ ختم کیا وہ ہو نہ ہو اس سے کیا فرق پڑتا ہے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ 18 ویں ترمیم میں 2006 کے اختیار نیچے سے اوپر لے گئے اور لوگوں کو فائدہ نہ پہنچ سکا، حکومت کو اب نیچے سے اوپر کی طرف دیکھنا ہو گا جس کا زبردست نظام لوکل گورنمنٹ ہے، وزرائے اعلی کی طرف سے لوکل گورنمنٹ کی مخالفت کی جا رہی ہے، ارکان اسمبلی پولیس اور پٹواری سے اوپر سوچنے کیلئے راضی ہی نہیں ہیں، گزشتہ دور میں شہباز شریف نے پنجاب کے بجٹ کا بڑا حصہ لاہور میں خرچ کیا، سندھ حکومت کراچی میں ایک روپیہ نہیں خرچ کر رہی، پی ٹی آئی کو دباؤ میں آکر سندھ کو 11 سو ارب روپے اضافی دینے پڑے،اسلام آباد سے بیٹھ کر کیسے آپ سندھ کے مسئلے حل کر سکتے ہیں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔