پاکستان گیس، بجلی اورکھانے پینے کی اشیا پر سبسڈی ختم کرے، آئی ایم ایف

ارشاد انصاری  منگل 28 ستمبر 2021
آئی ایم ایف کی سبسڈی کو صرف مستحق لوگوں تک محدود کرنے کی تجویز  . فوٹو: فائل

آئی ایم ایف کی سبسڈی کو صرف مستحق لوگوں تک محدود کرنے کی تجویز . فوٹو: فائل

 اسلام آباد: بین الاقوامی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) نے پاکستان کو بجلی، گیس، آٹا، چینی اوردالوں سمیت دیگر اشیاء پر دی جانے والی غیر ضروری سبسڈی ختم کرنے اور سبسڈی کو صرف مستحق لوگوں تک محدود کرنے کی تجویز دیدی۔

آئی ایم ایف کے ساتھ پروگرام ٹریک پر لانے کیلئے پاکستان اوربین الاقوامی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف ) کے درمیان اقتصادی جائزہ کے لئے مذاکرات اگلے ماہ ہوں گے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف کی جانب سے پاکستان سے آٹے، گھی، چینی، دالوں اور چاول کے ساتھ گیس اور بجلی پر بھی سبسڈی ختم کرنے کے ساتھ مالی نظم و ضبط قائم کرنے پر زور دیا جارہا ہے جب کہ حکومت کی کوشش ہے کہ آئی ایم ایف سے اشیائے ضروریہ پر سبسڈی سے متعلقہ شرائط پر چھوٹ حاصل کی جاسکے جب کہ آئی ایم ایف کی طرف سے پاکستان پر زور دیا جارہا ہے کہ سبسڈی کو مزید محدود کیا جائے اور آٹے، گھی، چینی، دالوں اور چاول پر سبسڈی ختم کرکے صرف احساس پروگرام میں شامل افراد کو ہی ٹارگیٹڈ سبسڈی دی جائے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف کے ساتھ مذاکرات میں پاکستانی معیشت، اہداف کے حصول، سبسڈی، محصولات اور گردشی قرضے کی صورتحال کا جائزہ لیاجائے گا۔

ذرائع کا مزید کہنا تھا کہ مذاکرات کی کامیابی کی صورت میں حکومت کو نہ صرف آئی ایم ایف سے ایک ارب ڈالر قرض کی قسط جاری کی جائے گی بلکہ ایشیائی ترقیاتی بینک اور عالمی بینک سے بھی فنانسنگ حاصل کرنے میں مدد ملے گی جس کیلئے پاکستان کی کوشش ہے کہ آئی ایم ایف کے ساتھ مذاکرات کو کامیاب کیا جائے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔