حکومت کا کالعدم ٹی ایل پی کے سربراہ سعد رضوی سے جیل میں مذاکرات کا فیصلہ

ویب ڈیسک  ہفتہ 23 اکتوبر 2021
حکومتی کمیٹی کا ایک وفاقی اور ایک صوبائی وزیر مذاکرات کے لئے آج کوٹ لکھپت جیل جائے گا، ذرائع۔ فوٹو:فائل

حکومتی کمیٹی کا ایک وفاقی اور ایک صوبائی وزیر مذاکرات کے لئے آج کوٹ لکھپت جیل جائے گا، ذرائع۔ فوٹو:فائل

لاہور: وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید کی زیر صدارت ہونے والے اہم اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ کالعدم تحریک لبیک کے سربراہ حافظ سعد رضوی سے جیل میں مذاکرات کیے جائیں گے۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید کی زیر صدارت لاہور میں اہم اجلاس ہوا، پنجاب سیف سٹی اٹھارٹی آفس میں جاری اجلاس میں وفاقی اور صوبائی وزراء بھی شریک ہوئے،  اجلاس میں نور الحق قادری ،علی امین گنڈہ پور، صوبائی وزیر قانون راجا بشارت ،آئی جی پنجاب اور دیگر بھی  موجود تھے۔

اس خبرکوبھی پڑھیں:  عمران خان کی وزرا کو کالعدم تحریک لبیک سے مذاکرات کی ہدایت

ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیر داخلہ شیخ رشید کو کالعدم تنظیم ٹی ایل پی مارچ کے حوالے سے بریفنگ دی گئی، اور اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ حکومتی مذاکراتی کمیٹی آج کوٹ لکھپت جیل جائے گی، کمیٹی میں ایک وفاقی وزیر اور ایک صوبائی شامل ہوں گے، کوٹ لکھپت جیل میں قید سعد رضوی سے مذاکرات کئے جائیں گے۔

اس خبرکوبھی پڑھیں:  ٹی ایل پی اور پولیس میں جھڑپیں، راولپنڈی میں کرفیو جیسی صورتحال

واضح رہے کہ وزیراعظم عمران خان سعودی عرب روانہ ہوچکے ہیں، اور انہوں نے وزیرداخلہ شیخ رشید، وفاقی وزیر مذہبی امور نورالحق قادری اور صوبائی وزیرقانون راجا بشارت پر مشتمل حکومتی ٹیم کو کالعدم تحریک لبیک پاکستان کی قیادت سے مذکرات کرکے معاملات کو حل کرنے کی ہدایت جاری کی ہے۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔