پنجاب اسمبلی؛ نکاح نامے میں ختم نبوت ﷺکا حلف شامل کرنے کی قرارداد متفقہ منظور

اسٹاف رپورٹر  منگل 26 اکتوبر 2021
اجلاس میں 4 مجوزہ بل بھی پیش، جنہیں متعلقہ قائمہ کمیٹیوں کے سپرد کر کے دوماہ میں رپورٹ طلب کرلی گئی  فوٹو: فائل

اجلاس میں 4 مجوزہ بل بھی پیش، جنہیں متعلقہ قائمہ کمیٹیوں کے سپرد کر کے دوماہ میں رپورٹ طلب کرلی گئی فوٹو: فائل

 لاہور: پنجاب اسمبلی نے نکاح نامے کے فارم میں ختم نبوت ﷺکا حلف شامل کرنے کی قرارداد متفقہ طور پر منظور کر لی۔

اسپیکر چوہدری پرویزالٰہی کی صدارت میں پنجاب اسمبلی کا اجلاس ایک گھنٹہ 51منٹ کی غیر معمولی تاخیر سے شروع ہوا۔ اجلاس کے آغاز میں ممتاز ایٹمی سائنسدان ڈاکٹر عبد القدیر خان، مسلم لیگ (ن) کے اراکین اسمبلی پرویز ملک ،نشاط احمد ڈاھا کی وفات اور رحیم یار خان میں ڈاکوؤں کی فائرنگ سے جاں بحق ہلاک ہونے والوں کے لئے فاتحہ خوانی کی گئی جبکہ سابق ایم پی اے پیٹر گل کی وفات پر ایک منٹ کی خاموشی اختیار کی گئی اور اقلیتی رکن طارق گل نے دعا بھی کرائی۔

اجلاس میں مسلم لیگ (ق) کی خدیجہ عمر، بسمہ چوہدری اور مسلم لیگ (ن) کے مولانا الیاس چنیوٹی کی جانب سے نکاح نامے کے فارم میں ختم نبوت ﷺ کا حلف شامل کرنے کے لیے پیش کی گئی مشترکہ قرارداد متفقہ طور پر منظور کر لی گئی۔

اجلاس کے دوران یونیورسٹی آف لاہور ترمیمی بل 2021، راشد لطیف خان یونیورسٹی بل 2021، پنجاب کمیونٹی سیفٹی میجرز ان اسپورٹس اینڈ ہیلتھ کلبز اور یونیورسٹی آف مینجمنٹ اینڈ ٹیکنالوجی لاہور 2021 بل پیش کئے گئے جنہیں اسپیکر نے متعلقہ قائمہ کمیٹیوں کے سپرد کر کے دوماہ میں رپورٹ طلب کرلی۔

اسپیکر نے مسلم لیگ (ن) کے رکن پنجاب اسمبلی نشاط احمد ڈاہا کی وفات پر کارروائی مختصر کرتے ہوئے پنجاب اسمبلی کا اجلاس بدھ کی صبح ساڑھے گیارہ بجے تک ملتوی کر دیا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔