نئے وزیراعلیٰ کا انتخاب؛ پنجاب اسمبلی کا اجلاس 16 اپریل تک موخر

ویب ڈیسک  منگل 5 اپريل 2022
پنجاب اسمبلی کا اجلاس کل 6 اپریل کو ہونا تھا فوٹو:فائل

پنجاب اسمبلی کا اجلاس کل 6 اپریل کو ہونا تھا فوٹو:فائل

 لاہور: پنجاب میں سیاسی بحران برقرار ہے اور صوبائی اسمبلی کا اجلاس 16 اپریل تک موخر کردیا گیا ہے۔

پنجاب اسمبلی کا اجلاس کل 6 اپریل بدھ کو ہونا تھا لیکن اب 16 اپریل کو دوپہر ساڑھے 11 بجے ہوگا۔ ڈپٹی اسپیکر نے اجلاس موخر کرنے کی منظوری دیتے ہوئے 16 اپریل کو دوبارہ طلب کرلیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: وزیراعلیٰ کا الیکشن آئین کے مطابق ہونا ضروری ہے، کل پنجاب اسمبلی کی اپ ڈیٹ لیں گے، چیف جسٹس

گزشتہ اجلاس میں ہونے والی توڑپھوڑ کو اس فیصلے کی وجہ بتایا گیا ہے۔ اسمبلی ذرائع کے مطابق ایوان اور لابی میں ٹوٹ پھوٹ کی مرمت کے لیے اجلاس تاخیر کا شکار ہوا۔ نقصان پہنچنے والی اشیا کی مرمت کے لیے وقت درکار ہے جس کے لیے اجلاس کی تاریخ میں توسیع کی گئی۔

یہ پیش رفت ایسے وقت سامنے آئی ہے جب وزیراعظم عمران خان، شاہ محمود قریشی، اسد عمر، شیخ رشید، پرویز خٹک، شفقت محمود، فواد چوہدری، حماد اظہر آج ہی اسلام آباد سے لاہور پہنچے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: نئے وزیراعلیٰ کا انتخاب نہ ہوسکا، پنجاب اسمبلی کا اجلاس 6 اپریل تک ملتوی

آج سپریم کورٹ میں چیف جسٹس نے ایڈووکیٹ جنرل پنجاب سے پوچھا تھا کہ اتنا بتا دیں کل پنجاب میں وزیراعلی کا الیکشن ہوگا یا نہیں؟۔ اس پر ایڈووکیٹ جنرل پنجاب نے جواب دیا کہ اسپیکر پنجاب اسمبلی آئین کی مکمل پاسداری کرینگے، کل پنجاب اسمبلی کا اجلاس صبح 11:30 بجے ہوگا۔

چیف جسٹس نے ہدایت کی کہ وزیراعلی کا الیکشن آئین کے مطابق ہونا ضروری ہے، کل سماعت کے دوران پنجاب اسمبلی کے حوالے سے اپ ڈیٹ لیں گے۔

یہ بھی پڑھیں: پنجاب اسمبلی میں ہنگامہ آرائی پر 18 اپوزیشن ارکان کی رکنیت معطلی پر غور

واضح رہے کہ اپوزیشن نے وزیراعلیٰ عثمان بزدار کے خلاف تحریک عدم اعتماد پیش کی تھی جس پر وہ مستعفی ہوگئے تھے اور اتوار 3 اپریل کو صوبائی اسمبلی کا اجلاس ہونا تھا جس میں حمزہ شہباز اور پرویز الہی وزارت اعلیٰ کے عہدے کے لیے مدمقابل ہیں، لیکن اس روز حکومت نے صوبائی اسمبلی کا اجلاس ملتوی کردیا تھا جبکہ قومی اسمبلی ہی تحلیل کردی گئی تھی۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔