کابینہ کا پارلیمنٹ کے ان کیمرہ سیشن میں لیٹر گیٹ پر بحث کرانے کا فیصلہ

ویب ڈیسک  جمعـء 8 اپريل 2022
سپریم کورٹ کے حکم پر بحال ہونے والی وفاقی کابینہ کا پہلا اجلاس۔ (فوٹو انٹرنیٹ)

سپریم کورٹ کے حکم پر بحال ہونے والی وفاقی کابینہ کا پہلا اجلاس۔ (فوٹو انٹرنیٹ)

 اسلام آباد: سپریم کورٹ کے حکم پر بحال ہونے والی وفاقی کابینہ نے پارلیمنٹ کے ان کیمرہ سیشن میں لیٹر گیٹ پر بحث کرانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

ذرائع کے مطابق سائفر میسج کا لب لباب ان کیمرہ سیشن میں پیش کیا جائے گا۔

کابینہ نے الیکشن کمیشن کی طرف سے الیکشن تین ماہ کی بجائے سات ماہ میں کروانے کی مذمت کی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ الیکشن کمیشن کی ذمہ داری ہے کہ الیکشن تین ماہ میں کروائے لیکن الیکشن کمیشن اپنی آئینی ذمہ داری پوری کرنے میں ناکام رہا ہے۔

ذرائع کے مطابق کابینہ کے اجلاس میں مشیر پارلیمانی امور بابر اعوان اور شیریں مزاری بہت زیادہ بولتے رہے۔

قانونی مشیروں نے کابینہ کو مشورہ دیا کہ بے شک سپریم کورٹ نے ہدایت دی ہے تاہم اختیارات کی تقسیم میں پارلیمنٹ سپریم ہے اور سپریم کورٹ پارلیمنٹ کے آئینی اختیارات کو کم نہیں کر سکتی۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز سپریم کورٹ نے اسپیکر رولنگ کیس میں ڈپٹی اسپیکر کی رولنگ کو غیر آئینی قرار دیا تھا جس کے بعد تحلیل کی گئی قومی اسمبلی اور وفاقی کابینہ کی حیثیت بحال ہوگئی تھی۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔