طالبان کا سابق حکام اور بااثر شخصیات سے بجلی بلوں کی وصولی کا حکم

ویب ڈیسک  منگل 12 اپريل 2022
طالبان کے نائب وزیر اعظم، ملا عبدالغنی برادر، [فائل-فوٹو]

طالبان کے نائب وزیر اعظم، ملا عبدالغنی برادر، [فائل-فوٹو]

کابل: امارت اسلامیہ افغانستان (ای آئی اے) کے نائب وزیر اعظم ملا عبدالغنی برادر نے سیکورٹی ایجنسیوں کو سابق حکومتی عہدیداروں اور طاقتور شخصیات سے بجلی کے بلوں کی وصولی کا حکم دیا ہے۔

افغان نشریاتی ادارے آریانا نیوز کے مطابق ملا عبدالغنی برادر نے سیکورٹی اداروں کو ہدایت کی کہ وہ ملک کی پاور یوٹیلیٹی کمپنی، دا افغانستان برشنا شرکت (DABS) کے ساتھ مل کر سابق سرکاری حکام اور طاقتور افراد سے واجب الادا رقم کی وصولی کے لیے کام کریں۔

ڈی اے بی ایس کے حکام کے مطابق گزشتہ اگست میں پچھلی حکومت کے خاتمے کے بعد سے کئی سرکاری محکموں اور اثرورسوخ رکھنے والے افراد نے اپنے بل ادا نہیں کیے ہیں۔

طالبان حکومت کے اقتصادی کمیشن نے افغانستان کے سینٹرل بینک اور سرکاری کمپنیوں کے نمائندوں کو بھی ہدایت کی کہ وہ سرکاری کمپنیوں پر بینکنگ پابندیوں کو کم کرنے کے لیے اصول و ضوابط قائم کریں۔

علاوہ ازیں کمیشن نے تمام وزارتوں کو اقتصادی ترقیاتی منصوبے تیار کریں اور جتنا جلد سے جلد ہوسکے طالبان کے سپریم لیڈر ہبتہ اللہ اخنذادہ کو جمع کرائیں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔