بجلی 4 روپے 5 پیسے فی یونٹ مہنگی ہونے کا امکان

ویب ڈیسک  جمعـء 20 مئ 2022
بجلی کی قیمت میں اضافے سے صارفین پر 59 ارب 45 کروڑ روپے کا اضافی بوجھ پڑے گا۔ فوٹو:فائل

بجلی کی قیمت میں اضافے سے صارفین پر 59 ارب 45 کروڑ روپے کا اضافی بوجھ پڑے گا۔ فوٹو:فائل

 اسلام آباد: سینٹرل پاور پرچیزنگ ایجنسی (سی پی پی اے) نے نیپرا کو اپریل کی ماہانہ فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی 4 روپے 5 پیسے فی یونٹ مہنگی کرنے کی درخواست دے دی۔ 

ایکسپریس نیوز کے مطابق بجلی کی لوڈ شیڈنگ سے پریشان حال عوام کے لئے ایک مزید بری خبر یہ ہے کہ ملک میں بجلی کی فی یونٹ قیمت میں 4 روپے 5 پیسے اضافے کا امکان ہے، اس حوالے سے سینٹرل پاور پرچیزنگ ایجنسی (سی پی پی اے) نے نیپرا کو اپریل کی ماہانہ فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی مہنگی کرنے کی درخواست دائر کردی ہے۔

سی پی پی اے نے اپنی درخواست میں بجلی کی قیمت فی یونٹ 4 روپے 5 پیسے اضافے کی درخواست کرتے ہوئے کہا ہے کہ اپریل میں 13 ارب 55 کروڑ یونٹس بجلی پیدا کی گئی جس کی فی یونٹ پیداواری لاگت 10 روپے 66 پیسے فی یونٹ رہی، اپریل کے لئے ریفرنس لاگت 6 روپے 60 پیسے فی یونٹ مقرر تھی۔ درخواست میں بتایا گیا کہ پانی سے 18 اعشاریہ 55 فیصد، کوئلے سے 16 اعشاریہ 74 فیصد اور فرنس آئل سے 12 اعشاریہ 7 فیصد بجلی پیدا کی گئی، فرنس آئل سے پیدا ہونے والی بجلی کی فی یونٹ لاگت 28 روپے 19 پیسے فی یونٹ رہی، اپریل میں مقامی گیس سے 9 اعشاریہ 85 فیصد، درآمدی ایل این جی سے 19 اعشاریہ 42 فیصد، جوہری ایندھن سے 17 اعشاریہ 37 فیصد اور ہوا سے 3 اعشاریہ 59 فیصد بجلی پیدا کی گئی۔

سی پی پی اے کی درخواست پر نیپرا میں 31 مئی کو سماعت کی جائے گی، حتمی فیصلہ اتھارٹی سماعت کے بعد کرے گی،  بجلی کی قیمت میں اضافے سے صارفین پر 59 ارب 45 کروڑ روپے کا اضافی بوجھ پڑے گا، فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی درخواست کے الیکٹرک کے سوا تمام بجلی تقسیم کار کمپنیوں کیلئے ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔