امریکی چڑیا گھر میں نایاب ترین بھیڑیئے کی پیدائش

ویب ڈیسک  پير 30 مئ 2022
روڈ آئی لینڈ کے ایک چڑیا گھر میں سرخ بھیڑیئے کی پیدائش ہوئی ہے جو سیارے پر نایاب ترین جانور بھی ہے۔ فوٹو: یو پی آئی

روڈ آئی لینڈ کے ایک چڑیا گھر میں سرخ بھیڑیئے کی پیدائش ہوئی ہے جو سیارے پر نایاب ترین جانور بھی ہے۔ فوٹو: یو پی آئی

رہوڈ آئی لینڈ: امریکی چڑیا گھر کی انتظامیہ دنیا کے نایاب ترین سرخ بھیڑیئے کے بچے کی پیدائش پر بہت خوش ہے کیونکہ ’ریڈ وولف‘ کی بقا کو اتنا خطرہ لاحق ہے کہ اس کی نسل ناپید ہونے کے قریب پہنچ چکی ہے۔

روڈ آئی لینڈ میں واقع راجر ولیمز چڑیا گھر میں مشہور لیکن انتہائی کمیاب ریڈ وولف کی مادہ نے ایک بچے کو جنم دیا ہے۔ چڑیا گھر انتظامیہ کے مطابق یہ 2005 کے بعد سے اس جانور کی پہلی پیدائش بھی ہے۔

چڑیا گھر میں خصوصی نگہداشت میں رکھے جوڑے میں سے مادہ بریوو کی عمر 6 اور ڈیاگو نامی مرد کی عمر 7 برس ہے جنہوں نے پہلی مرتبہ ایک بچے کو جنم دیا ہے۔

اس پیدائش سے پہلے ہی بچے کے لیے ایک خصوصی گھر بنایا گیا تھا۔ یہاں کیمرے اور انفراریڈ سینسر لگائے گئے ہیں جن کی مدد سے ماں اور بچے پر خصوصی نظر رکھی جا رہی ہے۔ جانوروں کے ڈاکٹروں کے مطابق یہ تیزی سے وزن بڑھا رہا ہے اور اگلے چند ماہ اس کی نشوونما کے لیے انتہائی اہم ہیں۔

واضح رہے کہ ریڈ وولف دنیا کے انتہائی کمیاب ترین جانوروں میں شامل ہیں اوران کی آبادی صرف 15 سے 20 رہ گئی ہے۔ تاہم بعض حوالوں کے مطابق بالغ اور بچوں پر مشتمل سرخ بھیڑیوں کی تعداد 200 تک ہوسکتی ہے جو مختلف جنگلات میں مقیم ہیں۔

واضح رہے کہ فطرت کی بقا سے وابستہ عالمی تنظیم آئی یو سی این نے بھی سرخ بھیڑیئے کو گزشتہ 20 برس سےانتہائی کم یاب اور ناپیدگی کے کنارے پر کھڑے جانوروں میں شامل کیا ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔