جی-7 ممالک دنیا کو تقسیم کرنے کی کوشش کر رہے ہیں، چین

ویب ڈیسک  بدھ 29 جون 2022
جی سیون ممالک نے چین کی تجارتی پالیسیوں پر کڑی تنقید کی تھی، فوٹو: فائل

جی سیون ممالک نے چین کی تجارتی پالیسیوں پر کڑی تنقید کی تھی، فوٹو: فائل

بیجنگ: چین نے جی سیون ممالک کو کڑی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ ترقی یافتہ ممالک اپنے اقدامات کے ذریعے دنیا میں تقسیم پیدا کرنا چاہتے ہیں۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق جرمنی کے دارالحکومت برلن میں جی سیون ممالک کے سربراہان کے اجلاس میں چین پر عالمی منڈیوں میں قابض ہونے کے لیے مختلف حربے اپنانے کا الزام عائد کیا گیا تھا۔

جس پر چین نے جی سیون ممالک پر غیر ذمہ دارانہ طور پر دنیا کو تقسیم کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ ترقی یافتہ ممالک کے گروپ نے غیر ذمہ دارانہ اور اخلاقیات کے احساس سے عاری تقسیم پیدا کرنے کی کوشش کی ہے۔

چین نے متنبہ کیا ہے کہ جی سیون ممالک غاصبانہ رویہ ترک کرے اور چھوٹے ممالک کو بھی عالمی منڈی میں پھلنے پھولنے کا موقع دے جس کے لیے چین بیلٹ اینڈ روڈ جیسے منصوبے بنا رہا ہے۔

قبل ازیں جی ممالک کے سربراہی اجلاس کے اختتام پر جاری کیے گئے اعلامیے میں چین کے تجارتی طریقوں کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ چین غیر شفاف اور مارکیٹ کو مسخ کرنے والے حربے اپنائے ہوئے ہے۔

واضح رہے کہ جی سیون گروپ ترقی یافتہ ممالک برطانیہ، کینیڈا، فرانس، جرمنی، اٹلی، جاپان اور امریکا پر مشتمل ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔