ہارٹ اٹیک کی دوا فالج کے علاج میں بھی شفابخش ثابت

ویب ڈیسک  جمعـء 1 جولائ 2022
ہارٹ اٹیک کی عام دوا عام فالج کے مرض میں یکساں طور پر مفید ثابت ہوئی ہے۔ فوٹو: فائل

ہارٹ اٹیک کی عام دوا عام فالج کے مرض میں یکساں طور پر مفید ثابت ہوئی ہے۔ فوٹو: فائل

کیلگری، کینیڈا: کینیڈا کے ماہرین نے کہا ہے کہ ہارٹ اٹیک میں استعمال ہونے والی عام دوا فالج میں بھی یکساں مؤثر کردار ادا کرسکتی ہے۔

کیلگری یونیورسٹی کے ڈاکٹر بجوئے مین نے فالج کے مریضوں کے دماغی اسکین میں آلٹی پلیز اور ٹینیکٹی پلیز دواؤں کا موازنہ کیا ہے۔

فالج کے 80 فیصد مریض اشکیئمک فالج (اسٹروک) کے شکار ہوتے ہیں جس میں خون کے لوتھڑوں کے وجہ سے دماغ کی رگ بند ہوجاتی ہے یا رگیں کسی وجہ سے تنگ ہونے لگتی ہیں۔ ؎

گزشتہ 20 سال سے آلٹی پلیز (ٹی پی اے) کو خون کے لوتھڑے روکنے کے لیے معیاری دوا کا درجہ حاصل ہے۔ لیکن کینیڈا میں اپنی نوعیت کے ایک وسیع مطالعے سے ظاہر ہے کہ ہارٹ اٹیک میں فوراً دی جانے والی ایک دوا ٹینیکٹی پلیز (ٹی این کے) بھی فالج میں یکساں شفابخش ثابت ہوتی ہیں۔

’ٹینیکٹی پلیز خون کے لوتھڑے تیزی سے گھلاتی ہے اور سیکنڈوں میں مرتے دماغی خلیات کو بچا سکتی ہے،‘ ڈاکٹر بجوئے نے کہا۔ اسی بنا پر عالمی ماہرین کا اصرار ہے کہ فالج کی صورت میں ٹینیکٹی پلیز کا استعمال کیا جاسکتا ہے کیونکہ کئی صورت میں یہ آلٹی پلیز سے بہتر ہوتی ہے۔

دیگر تجزیہ کاروں نے بھی اس مطالعے کو اہم قرار دیا ہے جس میں 1600 سے زائد ایسے مریضوں کا جائزہ لیا گیا ہے جنہیں فالج کے بعد ہسپتال لایا گیا تھا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔