جون کے مہینے میں مہنگائی کی شرح میں 22 فیصد اضافہ

ویب ڈیسک  جمعـء 1 جولائ 2022
فوٹو:فائل

فوٹو:فائل

 اسلام آباد: وفاقی ادارۂ شماریات کی جانب سے جاری کی جانے والی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ گزشتہ جون کے مقابلے میں رواں سال کے چھٹے ماہ میں مہنگائی کی شرح میں 21 فیصد اضافہ ہوا جبکہ گزشتہ سال کی نسبت رواں برس مہنگائی 12 فیصد بڑھ گئی۔

ادارہ شماریات کے مطابق جون 2021 کے مقابلے میں جون 2022 میں مہنگائی میں 21 فیصد اضافہ ہوا، گزشتہ ماہ( جون2022) میں شہروں میں مہنگائی 6.19 فیصد اور دیہات میں 6.57 فیصد بڑھی جبکہ گزشتہ مالی سال2021-22 کے دوران  مہنگائی میں 12 فیصد اضافہ ہوامئی 2022 کے مقابلے میں جون 2022 میں بھی مہنگائی 6 فیصد بڑھ گئی ہے۔

وفاقی ادارہ شماریات کےکےاعداد وشمار کے مطابق جون میں سب سے زیادہ اضافہ بجلی اور ٹرانسپورٹ سیکٹر یا کرایوں کی مدمیں بالترتیب 52 اور 62 فیصد ہوا۔

کھانے پینے کی اشیاء کی قیمتیں 30 فیصد بڑھیں،  ایک ماہ میں آلو کی قیمت میں 36.64، انڈے 19.98، دال مسور 17.42، دال چنا 14.03، چنے 13.62، گندم 13.03، خوردنی گھی 12.86، ٹماٹر9.03 اور چاول کی قیمت میں 11.67 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا

وفاقی ادارہ شماریات کی جاری کردہ ماہانہ رپورٹ کے مطابق جون میں مرغی کے گوشت کی قیمت 7.83، آٹا 3.76 اور سبزیاں 3.54 فیصد کم ہوئیں۔ ادارہ شماریات کے مطابق ماہانہ بنیادوں پر دیہات میں ٹماٹر 27.70 ، آلو 25.85 ، انڈے 19.96، خوردنی تیل 18.27 فیصد اور خوردنی گھی 17.16 فیصد مہنگا ہوا جبکہ چکن 11.10 ، آٹا 4.01 اور پھلوں کی قیمت میں 3.54 فیصد کمی ہوئی۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ہفتہ وار بنیادوں پر مہنگائی میں 3.63 فیصد کے بڑے اضافے کے بعد  شرح 32.77فیصد پر پہنچ گئی، ٹماٹر، پیاز، دالوں سمیت 28 اشیاء کی قیمتیں بڑھ گئی ہیں۔

ادارہ شماریات کی ہفتہ وار رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ گذشتہ ایک ہفتے کے دوران ٹماٹر 22 روپے70 پیسے، پیاز 6 روپے 24 پیسے، دال ماش 7 روپے 18 پیسے، دال مونگ 3 روپے 34 پیسے فی کلو مہنگی ہوئی، انڈے 4 روپے 83 پیسے فی درجن، دال مسور3 روپے 86 پیسے فی کلومہنگی ہوئی ہیں جبکہ 6 اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں کمی ریکارڈ کی گئی جن میں برائلر مرغی، کیلے، لہسن، آٹے کا تھیلا اور خوردنی گھی شامل ہے۔

ایک سال کی مؤازنہ رپورٹ

ادارۂ شماریات کی جانب سے جاری رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ ایک سال میں شہروں میں پیاز کی قیمت میں 124.30، ٹماٹر 121.72، خوردنی گھی 76.71، دال مسور 74.32 اور خوردنی تیل 70.8 فیصد مہنگا ہوا۔

جاری کردہ رپورٹ کے مطابق شہری علاقوں میں ایک سال میں مصالحوں کی قیمت میں 20.11 ، دال مونگ 18.46 اور چینی 11.28 فیصد سستی ہوئی، دیہی علاقوں میں ایک سال کے دوران پیاز 175.59، ٹماٹر 149.57، خوردنی تیل 88.28 ، خوردنی گھی 86.34، دال مسور 73.93 فیصد مہنگی ہوئی۔

اس عرصے میں چنے 65.36، پھل 40.93، چکن 33.62 فیصد مہنگا ہوا، دال مونگ 14.64، مصالحے 11.58، چینی 10.3 فیصد سستی ہوئی۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔