انتہاء پسند بھارتی حکومت نے کشمیری فوٹو جرنلسٹ کو بیرون ملک سفر سے روک دیا

ویب ڈیسک  اتوار 3 جولائ 2022
(فوٹو: ٹوئٹر) بھارتی امیگریشن نے انہیں بلاجواز روکا گیا جبکہ کوئی وجہ بھی نہیں بتائی گئی، ثنا ارشاد

(فوٹو: ٹوئٹر) بھارتی امیگریشن نے انہیں بلاجواز روکا گیا جبکہ کوئی وجہ بھی نہیں بتائی گئی، ثنا ارشاد

نئی دہلی: بھارت کی انتہاء پسند حکومت نے بین الاقوامی شہرت کی حامل اور پلیٹزر پرائز پانے کا اعزاز رکھنے والی کشمیری فوٹو جرنلسٹ ثنا ارشاد فرانس جانے سے روک دیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق ثنا ارشاد کا کہنا ہے کہ بھارتی امیگریشن نے انہیں بلاجواز روکا گیا جبکہ کوئی وجہ بھی نہیں بتائی گئی، حکام کو بتایا کہ وہ ایک کتاب کی رونمائی اور تصویری نمائش میں حصہ لینے کے لیے فرانس جا رہی تھیں۔

ثنا ارشاد کئی سال سے مقبوضہ کشمیر میں ایک فوٹو جرنلسٹ کے طور پر کام کر رہی ہیں اور بھارتی فوج کی موجودگی میں کشمیر کی صؤرت حال کو اپنے کیمرے کی آنکھ سے دنیا کو دکھانے کا ایک ذریعہ ہیں۔

ثنا ارشاد موٹو ان فوٹو جرنلسٹس میں بھی شامل ہیں جنہوں رواں سال پلییٹزر پرائز بھی جیتا ہے، یہ پرائز کورونا کی بہترین کوریج پر انہیں دیا گیا تھا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔