خیبرپختونخوا کا اپنے وسائل سے قبائلی اضلاع کیلئے صحت کارڈ اسکیم جاری رکھنے کا فیصلہ

ویب ڈیسک  پير 4 جولائ 2022
—فائل فوٹو: اے ایف پی

—فائل فوٹو: اے ایف پی

 پشاور: حکومت کی جانب سے قبائلی اضلاع کیلیے صحت کارڈ پر مفت علاج کی سہولت معطل کیے جانے پر خیبرپختونخوا کی صوبائی حکومت نے اپنے وسائل سے اسیکم کو رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔ 

فراہم کردہ تفصیلات کے مطابق وزیر اعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان کی زیر صدارت صوبائی کابینہ کے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ وفاقی حکومت کی جانب سے ضم اضلاع کے صحت کارڈ اسکیم کی بندش کے بعد صوبائی حکومت اپنے وسائل سے اسکیم کو جاری رکھے گی۔

مزیدپڑھیں: وفاق نے قبائلی اضلاع کیلیے صحت کارڈ پر مفت علاج کی سہولت معطل کردی

اس موقع پر محمود خان نے کہا کہ وفاق سے اس اسکیم کے فنڈز کی منتقلی تک سکیم کو جاری رکھنے کے لیے ضروری انتظامات کئے جائیں، ضم اضلاع کا صحت کارڈ اسکیم کسی بھی حال میں بند نہیں ہونا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ قبائلی اضلاع کے عوام ہمارے اپنے بھائی ہیں انہیں مفت علاج کی سہولت سے محروم نہیں کیا جائے گا، صوبائی حکومت وفاق سے اس اسکیم کے فنڈز کی منتقلی کے معاملہ ہر فورم پر اٹھائے گی۔

وزیر اعلیٰ خیبرپختونخوا نے کہا کہ صوبائی حکومت ضم اضلاع سمیت خیبر پختونخوا کے حقوق پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرے گی۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔