برطانوی وزیراعظم کونئے بحران کا سامنا، وزیرصحت اوروزیرخزانہ مستعفی

ویب ڈیسک  بدھ 6 جولائ 2022
برطانوی وزیرصحت اوروزیرخزانہ نے جنسی ہراسگی کا سامنا کرنےوالےرکن پارلیمنٹ کو عہدہ دینےپراستعفیٰ دیا:فوٹو:فائل

برطانوی وزیرصحت اوروزیرخزانہ نے جنسی ہراسگی کا سامنا کرنےوالےرکن پارلیمنٹ کو عہدہ دینےپراستعفیٰ دیا:فوٹو:فائل

 لندن: برطانیہ کے وزیرصحت ساجد جاوید اوروزیرخزانہ رشی سونک نے استعفیٰ دے دیا۔

برطانوی میڈیا کے مطابق وزیرصحت ساجد جاوید اوروزیرخزانہ رشی سونک نے چند منٹوں کے فرق سے استعفیٰ وزیراعظم بورس جانسن کو بجھوایا۔

دونوں مستعفی وزرا نے وزیراعظم بورس جانسن کی حکومت چلانے کی صلاحیت پرسوال اٹھایا ہے۔وزیرصحت ساجد جاوید کا کہنا تھا کہ حکومت قومی مفاد میں کام نہیں کررہی۔ برطانوی میڈیا کا کہنا ہے کہ کابینہ کے دو اہم وزرا کے مستعفی ہونے سے بورس جانسن کی حکومت کوخطرہ لاحق ہوسکتا ہے۔

وزیرِاعظم کی جانب سے جنسی ہراسگی کے الزامات کا سامنا کرنے والے رکن پارلیمنٹ کرس پنچر کو ایک حکومتی عہدے پر لگانے اوراس کے بعد معافی مانگنے کے بعد دونوں وزرا نے استعفے دئیے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔