خوشخبری؛ عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتوں میں نمایاں کمی

ویب ڈیسک  بدھ 6 جولائ 2022
رواں برس کے اختتام تک خام تیل کی قیمت 65 ڈالر فی بیرل رہ جائے گی، بلوم برگ (فوٹو: فائل)

رواں برس کے اختتام تک خام تیل کی قیمت 65 ڈالر فی بیرل رہ جائے گی، بلوم برگ (فوٹو: فائل)

عالمی مارکیٹ میں امریکی اور برطانوی خام تیل کی قیمتوں میں 9 فیصد تک کمی واقع ہوئی ہے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق عالمی منڈی میں برطانوی خام تیل ’’برینٹ‘‘ کی قیمت میں 10.77 ڈالر جب کہ امریکی خام تیل ’’ویسٹ ٹیکساس انٹرمیڈیٹ‘‘ کی قیمت 9.30 ڈالر فی بیرل کی کمی ہوئی ہے۔

برینٹ کی قیمت 9.5 فیصد کمی کے بعد 102.73 ڈالر فی بیرل ہوگئی جب کہ امریکی خام تیل 8.6 فیصد کم ہو کر 99.13 ڈالر فی بیرل ہوگیا۔ خام تیل کی قیمتوں میں کمی عالمی کساد بازاری کے خدشے اور دیگر عالمی امور کے باعث ہوئیں۔

بلوم برگ میں شائع ہونے والی ایک رپورٹ میں سٹی گروپ کے حوالے سے انکشاف کیا گیا ہے کہ رواں برس کے اختتام تک خام تیل کی قیمت 65 ڈالر تک گر سکتی ہے جب کہ آئندہ برس کے اختتام تک یہ قیمت 45 ڈالر فی بیرل رہ جائے گی۔

اس رپورٹ میں بھی خام تیل کی قیمتوں میں نمایاں کمی کی وجہ کساد بازاری کو قرار دیا گیا ہے۔

عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتوں میں کمی کے بعد کیا پاکستان میں بھی وفاقی وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کے وعدے کے مطابق قیمتیں کم کی جائیں گے۔

اس سوال پر اوگرا کے ترجمان عمران غزنوی نے  اردو نیوز کو بتایا کہ عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتیں ایک دو دن کے لیے نیچے آنے سے قیمتوں پر کوئی اثر نہیں پڑتا۔

ترجمان اوگرا نے اردو نیوز سے گفتگو میں مزید بتایا کہ اگر عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتیں 15 روز تک مسلسل گرتی رہیں تب ہی پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا امکان ہوسکتا ہے۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔