امریکا کی جانب سے اتحادی کا درجہ ختم کرنے پرپریشانی نہیں ، ترجمان طالبان

ویب ڈیسک  جمعرات 7 جولائ 2022
افغان عوام نے گزشتہ 20 سالوں میں بہت تکالیف کا سامنا کیا،ترجمان طالبان:فوٹو:فائل

افغان عوام نے گزشتہ 20 سالوں میں بہت تکالیف کا سامنا کیا،ترجمان طالبان:فوٹو:فائل

کابل: طالبان حکومت کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد کا کہنا ہے کہ امریکا سے 10 سالہ پرانا معاہدہ ختم ہونے پرکوئی پریشانی نہیں۔

طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے بیان میں کہا کہ افغان عوام نے گزشتہ 20 سالوں کے دوران بہت مشکلات اٹھائی ہیں۔ امریکا کے نام اورغیرنیٹو اتحادی بننے سے افغان عوام کو کوئی فائدہ نہیں پہنچا۔

ذبیح اللہ مجاہد نے مزید کہا کہ طالبان حکومت کو امریکا کی جانب سے معاہدہ ختم کرنے پر کوئی پریشانی نہیں ہے۔امریکا نے2012 میں افغانستان کوغیرنیٹو اتحادی کے طورپر تسلیم کیا تھا اوراس سلسلے میں سابق امریکی وزیرخارجہ ہیلری کلنٹن اورافغان صدر حامد کرزئی نے مشترکہ طورپر اعلان کیا تھا۔

امریکی صدر جوبائیڈن نے ایوان نمائندگان کے نام خط میں کہا ہے کہ وہ افغانستان کی غیرنیٹو اتحادی کے طورپر رکنیت ختم کرنا چاہتے ہیں۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔