برطانیہ میں 800 سال پُرانا لاکٹ دریافت

ویب ڈیسک  منگل 2 اگست 2022
یہ ڈیزائن بالکل ویسا ہی ہے جیسا انگلش فٹبال ٹیم کی قمیض پر بنا ہوتا ہے

یہ ڈیزائن بالکل ویسا ہی ہے جیسا انگلش فٹبال ٹیم کی قمیض پر بنا ہوتا ہے

برمنگھم: برطانیہ میں ایچ ایس 2 ہائی اسپیڈ ریل منصوبے پر کام کرنے والے ماہرینِ آثارِ قدیمہ نے 800 سال پُرانا ایک لاکٹ دریافت کیا ہے جس پر سونے کے تین شیر بنے ہوئے ہیں۔

12ویں صدی عیسوی سے تعلق رکھنے والا یہ انمول خزانہ برمنگھم کے جنوب مشرق میں موجود واروِکشائر کے علاقے کے گاؤں وورملیٹن سے دریافت ہوا۔ اس لاکٹ میں لال رنگ پر تین سنہرے شیر بنے ہوئے ہیں۔ یہ ڈیزائن بالکل ویسا ہی ہے جیسا انگلش فٹبال ٹیم کی قمیص پر بنا ہوتا ہے۔

اس لاکٹ کی چوڑائی دو سینٹی میٹر اور لمبائی چار سینٹی میٹر سے تھوڑی زیادہ تھی اور اوپر کی جانب ایک کنڈا لگا ہے جس سے اسے باندھا جاتا تھا۔ ماہرینِ کا خیال ہے کہ جس وقت یہ لاکٹ کھویا اس وقت یہ ممکنہ طور پر نیا تھا۔

شیروں کو انگلینڈ کے نشان کے طور پراستعمال کیا جانا پہلے نارمن بادشاہ ولیم فاتح کے دور سے جُڑتا ہے جس نے 1066 عیسوی سے 1087 عیسوی تک حکومت کی۔

بادشاہ ولیم فاتح نے لال پس منظر پر دو شیروں کو استعمال کیا اور انگلش تخت کا نشان بنایا۔ اس نشان میں تیسرے شیر کا اضافہ ہینری دوم نے کیا جو 1154ء سے 1189ء تک انگلینڈ کا بادشاہ رہا۔

ایچ ایس 2 کے مطابق جس جگہ یہ لاکٹ پایا گیا وہاں آہنی دور یا رومی و برطانوی بستیاں آباد ہوں گی۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔