سانس اور پھیپھڑوں کی صحت بتانے والا لباس

ویب ڈیسک  ہفتہ 6 اگست 2022
جرمنی کے ماہرین نے سینے پر پہنی جانے والی ویسٹ کوٹ بنائی ہے جو ہر عملِ تنفس میں خفیف سی آواز کو بھی نوٹ کرسکتی ہے۔ فوٹو: فائل

جرمنی کے ماہرین نے سینے پر پہنی جانے والی ویسٹ کوٹ بنائی ہے جو ہر عملِ تنفس میں خفیف سی آواز کو بھی نوٹ کرسکتی ہے۔ فوٹو: فائل

جرمنی: جرمن کے کئی سائنسی اداروں نے مشترکہ کوشش سے ایک ویسٹ کوٹ یا صدری بنائی ہے جو پہننے والے کی سانس اور پھیپھڑوں کی کیفیات نوٹ کرتی ہیں۔ اسے نیومو ویسٹ کا نام دیا گیا ہے جو بطورِ خاص کووڈ 19 کے مریضوں کے لئے وضع کی گئی ہے۔

جرمنی میں فرونیفر ریسرچ گروپ کے دس اداروں نے مشترکہ طور پر یہ پوشاک بنائی ہے جو سانس کے اتار چڑھاؤ کو کسی اسٹیتھواسکوپ کی طرح نوٹ کرتی ہے اور اس کی خبر متعلقہ ڈاکٹروں تک بھی پہنچاسکتی ہے۔

اگرچہ یہ پہننے میں تھوڑی تنگ ہیں لیکن اس کی پشت اور سامنے کی طرف کئی داب برق (پیزوالیکٹرک) سینسر لگے ہیں۔ یہ سینسر پھیپھڑوں اور سانس کی نالیوں سے آنے والی خفیف ترین آواز بھی سن سکتے ہیں۔ چونکہ سینسر کی پوزیشن عین سینے اور پھیپھڑوں کی درست جگہوں پر ہوتی ہے تو ماہرین فوراً معلوم کرلیتے ہیں کہ یہ آواز کہاں سے آرہی ہے اور اس کا کیا مطلب ہوسکتا ہے؟

اس کا سافٹ ویئر تمام ڈیٹا اور آوازوں کو جمع کرتا ہے اور اس بنا پر پھیپھڑوں کی ایک تصویر بناتا ہے جس میں متاثرہ مقامات کی نشاندہی ہوتی ہے۔ اس تصویر کو موبائل فون میں دیکھا جاسکتا ہے یا کسی سرور پر پہنچایا جاسکتا ہے۔ اس طرح مسلسل ایک شرٹ نما صدری سے پھیپھڑوں کا مکمل احوال معلوم کیا جاسکتا ہے خواہ وہ گھر میں ہو یا کسی دفتر میں۔

اگرچہ ماہرین کا خیال ہے کہ یہ سینے کے مرض کے ماہر کی جگہ نہیں لے سکتی لیکن اس سے معلوم کیا جاسکتا ہے کہ سانس لینے کے عمل میں کس مقام پر خرابی ہے۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔