پاکستان کے سیلاب زدگان کی محض 20 لاکھ ڈالر امداد تضحیک ہے، آسٹریلوی سینیٹر

ویب ڈیسک  پير 5 ستمبر 2022
سیلاب سے پاکستان کے 3 کروڑ 30 لاکھ افراد متاثر ہوئے، آسٹریلوی سینیٹر (فوٹو: فائل)

سیلاب سے پاکستان کے 3 کروڑ 30 لاکھ افراد متاثر ہوئے، آسٹریلوی سینیٹر (فوٹو: فائل)

نیو ساؤتھ ویلز: آسٹریلیا کی مسلم خاتون سینیٹر نے اپنی حکومت سے مطالبہ کیا کہ پاکستان کے سیلاب زدگان کے لیے صرف 20 لاکھ ڈالر امداد متاثرین کی تضحیک ہے اس میں فوری طور پر اضافہ کیا جائے۔

آسٹریلیا کی ریاست نیو ساؤتھ ویلز سے منتخب ہونے والی مسلم خاتون سینیٹر مہرین فاروقی نے کہا ہے کہ پاکستان میں سیلاب سے 3 کروڑ 30 لاکھ افراد بری طرح متاثر ہوئے ہیں۔ یہ تعداد آسٹریلیا کی کُل آبادی سے زیادہ ہے۔

سینیٹر مہرین فاروقی نے اپنی تقریر میں مزید کہا کہ پاکستان میں اس وقت جو حالات ہیں اس کا اندازہ لگانا مشکل ہے اور ایسی صورت حال میں ہماری حکومت نے صرف 20 لاکھ ڈالر کی امداد کا اعلان کیا ہے۔

آسٹریلوی سینیٹر مہرین فاروقی نے کہا کہ یہ امداد اتنی بڑی متاثرہ آبادی کی تضحیک ہے اس لیے آسٹریلوی حکومت اس امداد میں فوری طور پر اضافہ کرے کو مزید کچھ کرنے کی ضرورت ہے۔

سینیٹر مہرین فاروقی نے ٹوئٹر پر آسٹریلوی وزیر اعظم اور وزیر خارجہ کے نام لکھا خط شیئر کیا جس میں پاکستان کی امداد بڑھانے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ انھوں نے صارفین سے بھی درخواست کی کہ اس خط (آن لائن پٹیشن) کو دستخط کرکے زیادہ سے زیادہ شیئر کریں۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔