افغان بستی کے قریب کمسن بچے کی ہاتھ پاؤں بندھی لاش برآمد

اسٹاف رپورٹر  پير 5 ستمبر 2022
(فوٹو: فائل)

(فوٹو: فائل)

کراچی: نادرن بائی پاس افغان بستی کےقریب گراؤنڈ سے کمسن بچے کی ہاتھ پاؤں بندھی لاش ملی ہے۔ایڈیشنل آئی جی کراچی نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے ڈی آئی جی ویسٹ کی سربراہی ہی میں تفتیشی ٹیم مقررکردی ہے۔

تفصیلات کے مطابق گلشن معمارتھانے کے علاقے نادرن بائی پاس افغان بستی کے قریب گراؤنڈ سے کمسن بچے کی ہاتھ پاؤں بندھی لاش ملی ہے مقتول بچے کی لاش چھیپا ایمبولینس کے ذریعے عباسی شہید اسپتال منتقل کی گئی جہاں مقتول بچے کا پوسٹ مارٹم کیا جا رہا ہے۔

اس حوالے سے ڈی ایس پی سرجانی ٹاؤن فرحت کمال نے ایکسپریس کو بتایا کہ مقتول بچے کی شناخت 5 سالہ خالد ولد شیر آغا کے نام سے ہوئی ہے مقتول بچہ افغان بستی کا رہائشی تھا۔

پولیس حکام کے مطابق مقتول بچہ اتوارکی دوپہر 12 بجے سے لاپتہ تھا بچے کے لواحقین اپنے طورپر تلاش کر رہے تھے اورلواحقین کی جانب سے بچے کی گمشدگی کی رپورٹ درج نہیں کرائی تھی۔

پولیس حکام کے مطابق بچے کی لاش گھر سے تقریباً ایک کلو میٹر دورپہاڑی کے عقب سے ملی ہے مبینہ طور پر بچے کو سر سے گر دن تک تھیلی پہنا کر سانس بند کرکے قتل کیا گیا۔بچے کے جسم پر بظاہر تشدد کے نشانات نہیں ہیں بچے سے زیادتی کی گئی یا نہیں، پوسٹ مارٹم رپورٹ میں واضح ہوسکے گا۔

پولیس حکام نے بتایا کہ مقتول بچے کا والد شیر آغا کباڑ کا کام  کرتا ہے اور مقتول بچہ چار بہن بھائیوں میں دوسرے نمبر پر تھا۔

مقتول بچے کے والد نے پولیس کو بتایا ہےکہ ان کی کسی سے کوئی دشمنی نہیں ہے تاہم پولیس اس حوالے سے مزید تفتیش کر رہی ہے۔

دوسری جانب ایڈیشنل آئی جی کراچی جاوید عالم اوڈھو نے نادرن بائی پاس، افغان بستی کے قریب سے کم سن بچے کی لاش ملنےکےواقعہ کو نوٹس لیتےہوئےڈی آئی جی ویسٹ کی سربراہی ہی میں تفتیشی ٹیم مقرر کر دی ہے۔کمیٹی کے سربراہ تین روز میں کیس کی پروگریس رپورٹ پیش کریں گے۔

ایڈیشنل آئی جی کراچی نے تفتیشی ٹیم کو ہدایت دی ہے کہ قتل کی واردات میں ملوث سفاک ملزمان کی گرفتاری کو یقینی بنانے کے لیے پولیس ہر وسائل بروئے کار لائے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔