گائے کے گوشت سے متعلق بیان دینا رنبیر اور عالیہ کو مہنگا پڑ گیا

ویب ڈیسک  بدھ 7 ستمبر 2022
فوٹو: انٹرنیٹ

فوٹو: انٹرنیٹ

اجین: گائے کے گوشت سے متعلق بیان پر ہندو جنونیوں نے بالی وڈ سپر اسٹار جوڑی رنبیر اور عالیہ بھٹ  کو مند ر میں داخل ہونے سے روک دیا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق بالی وڈ سپر اسٹار جوڑی 9 ستمبر کو ریلیز ہو نے والی اپنی فلم براھماسترا کی کامیابی کیلئے بھارتی شہر اجین کے قدیم مندر پہنچی تو ہندو جنونیوں نے انہیں مندر میں داخلے سے روک دیا۔اسٹار کاسٹ  براہماستار کی ریلیز سے قبل کامیابی کیلئے پوجا کرنا چاہتی تھی۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق بجرنگ دل کے کارندوں نے رنبیر کپور کے گائے کے گوشت سے متعلق 11 سال قبل دیئے گئے بیان کو جواز بنا کر احتجاج کیا۔

واضح رہے کے رنبیر کپور نے 11 سال قبل ایک بیان میں کہا تھا کہ انہیں گائے کا گوشت پسندھے، 11سال قبل دیئے گئے بیان کی ویڈیو اس وقت سوشل میڈیا پر وائرل ہے تو دوسری جانب بالی وڈ سپر اسٹارز کی نئی فلم کے خلاف بائے کاٹ براھماستارا BoycottBrahmastra# بھی ٹرینڈ کررہا ہے۔

پولیس نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے مندر کے باہر موجود مظاہرین کو لاٹھی چارج کے ذریعے منتشر کردیا،اس دوران حراست میں لئے گئے افراد کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔

مزید پڑھیں: بائیکاٹ کے باوجود ’لال سنگھ چڈھا‘ 100 کروڑ روپے کمانے میں کامیاب

اس سے قبل بھی ہندو جنیونیوں کی طرف سے بالی وڈ سپر اسٹارز عامر خان سمیت اکشے کمار کو اپنی ریلیز ہونے والی نئی فلموں سے قبل بائیکاٹ کا سامنا کرنا پڑا، انتہا پسندوں کی طرف سے مستقل نشانہ بنائے جانے کے بعد رنبیر کپور اور عالیہ بھٹ کی بھی آنیوالی نئی فلم کو باکس آفس پر مشکلات کا سامناکرنا پڑسکتا ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔