سیلاب کے باعث ریلوے آپریشن معطل؛ سیکڑوں مسافر رُل گئے

ویب ڈیسک  جمعرات 8 ستمبر 2022
فوٹو فائل

فوٹو فائل

 لاہور: کراچی اور سکھر ڈویژن میں سیلابی پانی ریلوے ٹریک پر موجود ہونے کی وجہ سے ٹرین آپریشن مزید ایک ہفتہ تاخیر کا شکار ہوگیا، جس کے باعث اسٹیشن پر بیٹھے مسافر رل گئے۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق پاکستان میں شدید بارشوں اور سیلاب کے باعث ریلوے آپریشن بھی بری طرح متاثر ہوا ہے جو کئی روز گزرنے کے باوجود بحال نہیں ہوسکا، ریلوے ذرائع کا کہنا ہے کہ ٹرین آپریشن 15 ستمبر تک بحال کیے جانے کا امکان ہے۔

ریلوے ذرائع کا کہا ہے کہ نواب شاہ اور دیگر سیکشن کے ریلوے ٹریک پر سیلابی پانی ابھی تک موجود ہے جس کے باعث ریلوے حکام کو ایم ایل ون سمیت دیگر سیکشنوں پر ٹرین آپریشن شروع کرنا مشکل ہوتا جارہا۔

ٹرین آپریشن متاثر ہونے کی وجہ سے ریلوے انتظامیہ نے پانچویں مرتبہ آن لائن ٹرینوں کی بکنگ بند کردی کیوں کہ لاہور کراچی کوئٹہ اور سکھر کے درمیان مین لائن کی تمام ٹرینیں معطل ہیں۔

ریلوے حکام کی جانب سے اپ اور ڈاون کی 30 سے زائد ٹرینیں منسوخ کردی گئی ہیں جس کے باعث ریزرویشن دفاتر میں بھی بکنگ کا عمل مکمل طور پر روک دیا گیا۔

ریلوے ذرائع کا کہنا ہے کہ عوام ایکسپریس، بزنس ایکسپریس، قراقرم، شاہ حسین ایکسپریس، تیزگام، ملت ایکسپریس،  رحمان بابا، جعفر ایکسپریس اور علامہ اقبال ٹرینیں معطل کردی گئی جب کہ کراچی ایکسپریس، خیبر میل، شالیمار ایکسپریس اور بولان ٹرینیں بھی معطل کردی گئی۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔