بھارت؛ جنرل راوت کی طیارہ حادثہ میں موت کے9 ماہ بعد نئے چیف کا انتخاب

ویب ڈیسک  بدھ 28 ستمبر 2022
سابق چیف جنرل بپن راوت طیارہ حادثے میں ہلاک ہوگئے تھے، فوٹو: فائل

سابق چیف جنرل بپن راوت طیارہ حادثے میں ہلاک ہوگئے تھے، فوٹو: فائل

نئی دہلی: مودی سرکار نے جنرل بپن راوت کی طیارہ حادثے میں ہلاکت کے 9 ماہ بعد ان کے جانشین کا انتخاب کرلیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق 61 سالہ ریٹائرڈ فوجی افسر لیفٹیننٹ جنرل انیل چوہان کو ملک کا نیا چیف آف ڈیفنس اسٹاف مقرر کردیا گیا۔ یہ ملک کا سب سے بڑا فوجی عہدہ ہے جو مودی حکومت نے ایجاد نے کیا تھا۔

وزیراعظم نریندر مودی نے جنرل بپن راوت کے بطور آرمی چیف ریٹائرمنٹ کے بعد یکم جنوری 2020 کو چیف آف ڈیفنس اسٹاف کے عہدے پر پہلی تعیناتی جنرل بپن راوت کی ہی کی تھی۔

یہ خبر پڑھیں : بھارتی فضائیہ کا ہیلی کاپٹر تباہ، جنرل بپن راوت سمیت 13 افراد ہلاک 

اپوزیشن اور ناقدین نے اس عہدے کی تخلیق پر اعتراضات اُٹھائے تھے۔ اپوزیشن رہنماؤں کا کہنا تھا کہ وزیراعظم مودی نے اپنے دوست بپن راوت کو ریٹائرمنٹ کے بعد بھی نوازنے کے لیے یہ عہدہ تخلیق کیا ہے۔

عہدہ سنبھالنے کے دو سال بعد دسمبر 2021 میں جنرل بپن راوت ایک طیارہ حادثے میں اپنے ساتھیوں سمیت ہلاک ہوگئے تھے جس کے بعد سے یہ عہدہ خالی تھا۔

وزارت دفاع کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ نئے چیف آف ڈیفنس اسٹاف ریٹائرڈ لیفٹیننٹ جنرل انیل چوہان فوج میں 40 برس کے کریئر کے دوران جموں و کشمیر اور شمال مشرقی بھارت جیسے حساس کور کی کمان سنبھال چکے ہیں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔