کراچی میں اسلامیہ کالج کے طلباء نے کالج کے باہر سڑک پر کلاس شروع کردیں

اسٹاف رپورٹر  پير 21 نومبر 2022
اسلامی جمعیت طلبہ کی جانب سے اسلامیہ کالج کو خالی کرنے کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیا.

اسلامی جمعیت طلبہ کی جانب سے اسلامیہ کالج کو خالی کرنے کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیا.

 کراچی: اسلامی جمعیت طلبہ کی جانب سے اسلامیہ کالج کو خالی کرنے کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیا.

اسلامیہ کالج کے طلباء نے احتجاجی طور پر کالج کے باہر کلاس روم قائم کر کے تعلیمی سلسلہ جاری رکھنے کا فیصلہ کیا گیا۔

کراچی کے تاریخی تعلیمی ادارے اسلامیہ کالج کے طلباء کیساتھ مجرمانہ برتاؤ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ طلبا کا کہنا ہے کہ اگر کالج خالی کروایا گیا تو ہم کلاسز باہر لیں گے، ہم کالج پر کسی طور پر قبضہ نہیں کرنے دیں گے،طلباء کی جانب سے قبضے کے خلاف شدید نعرے بازی کی گئی۔

طلبا کا مطالبہ ہے کہ محکمہ تعلیم سندھ سپریم کورٹ میں کیس کے حوالے سے متحرک کردار ادا کرے اور کالج کو قبضے سے بچایا جائے۔

یہ بھی پڑھیں: کراچی، اسلامیہ کالج کی عمارت کو خالی کرانے کے دوران مزاحمت پر 4 طالب علم گرفتار

اس حوالے سے اسلامیہ کالج کی ملکیت کا دعوی کرنے والی خاتون حسنیٰ قریشی نے بھی احتجاج میں شرکت کی ، حسنی قریشی نامی خاتون کا کہنا تھا کہ اسلامیہ کالج تعلیمی مقاصد کے لیئے میرے دادا نے اپنے ساتھیوں کےساتھ کے ایم سی سے لیا تھا۔

انہوں نے کہا کہ اس زمین پر ہمارے ہی خاندان کے کچھ لوگ قبضہ کرنا چاہتے ہیں ، لیکن ہم ایسا ہونے نہیں دیں گے ، یہ کالج ہمیشہ تعلیم سے منسلک رہے گا۔

کالج انتظامیہ کا کہنا ہے کہ پولیس نے ہفتے کو بنا کسی تحریری احکامات کے کالج کو خالی کرانا چاہا تھا ، جبکہ کالج کا کیس عدالت میں چل رہا ہے ہزاروں بچوں کا مستقبل تاریک ہونے سے بچایا جائے۔

islamia

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔