لالو پرساد کا کڈنی ٹرانسپلانٹ؛ بیٹی نے گردہ عطیہ کیا

ویب ڈیسک  پير 5 دسمبر 2022
40 سالہ بیٹی نے اپنے والد 74 سالہ لالو ]پرساد کو گردہ عطیہ کیا، فوٹو: فائل

40 سالہ بیٹی نے اپنے والد 74 سالہ لالو ]پرساد کو گردہ عطیہ کیا، فوٹو: فائل

سنگاپور سٹی: بھارت کے معروف سیاست دان اور سابق وزیراعلیٰ بہار 74 سالہ لالو پرساد یادیو کا تبدیلیٔ گردہ کا آپریشن سنگاپور میں ہوگیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق سابق وفاقی وزیر ریلوے اور سابق وزیراعلیٰ بہار لالو پرساد یادیو کا کڈنی ٹرانسپلانٹ کامیابی سے ہوگیا۔ ان کی بیٹی روہنی آچاریہ نے اپنا گردہ دیا۔ دنوں باپ اور بیٹی آپریشن کے بعد خیریت سے ہیں۔

تبدیلیٔ گردے کا آپریشن سنگاپور کے ایک اسپتال میں ہوا۔ اُن کی منجھلی بیٹی روہنی آچاریہ سنگاپور میں ہی قیام پذیر ہیں اور انھوں نے اکتوبر میں بتایا تھا کہ میں اپنے والد کو اپنا گردہ دوں گی اور آپریشن سنگاپور میں ہی ہوگا۔

کرپشن کے کیسز میں ضمانت پر رہا لالو پرساد یادیو طویل عرصے سے علیل ہیں۔ اکتوبر کو وہ سنگاپور گئے تھے تاکہ تبدیلیٔ گردہ کا آپریشن ہوسکے تاہم ضمانت کی مدت ختم ہونے پر انھیں واپس بھارت جانا پڑا تھا۔

بھارت پہنچ کر انھوں نے گردوں کے ناکارہ ہوجانے کے باعث طبی بنیادوں پر ضمانت کروائی اور سنگاپور پہنچے جہاں آج ان کا کڈنی ٹرانسپلانٹ ہوگیا۔ دونوں باپ بیٹی کو فی الوقت انتہائی نگہداشت کے وارڈ میں رکھا گیا ہے۔

لالو پرساد یادیو ریاست بہار کے بے تاج بادشاہ ہیں اور ان کے ایک بیٹے اور بیٹی اب بھی بالترتیب ریاست کے ڈپٹی وزیراعلیٰ اور راجیہ سبھا کی رکن ہیں۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔