طالبان سے مذاکرات کیلیے تمام فریقین میں اتفاق رائے پیدا کیا، نواز شریف

نمائندہ ایکسپریس  جمعرات 3 اپريل 2014
 اسلام آباد:وزیراعظم نوازشریف سے برطانیہ کے مشیر برائے قومی سلامتی کم ڈیروچ ملاقات کررہے ہیں۔ فوٹو: اے پی پی

اسلام آباد:وزیراعظم نوازشریف سے برطانیہ کے مشیر برائے قومی سلامتی کم ڈیروچ ملاقات کررہے ہیں۔ فوٹو: اے پی پی

اسلام آباد: وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ معیشت، توانائی اور دہشتگردی ملک کو درپیش بڑے مسئلے ہیں، ہماری ترقی پسندانہ پالیسیوں کے ملکی معیشت پر مثبت اثرات مرتب ہوئے ہیں، ہماری سرزمین افغانستان کے خلاف استعمال نہیں ہوگی۔

پاکستان کے دورے پر آئے برطانیہ کے قومی سلامتی کے مشیر کم ڈیروچ سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ ہم نے توانائی کے بحران پر قابو پانے کیلئے ٹھوس اقدامات کیے ہیں، دہشتگردی کے مسئلے سے نمٹنے کیلئے مذاکرات کیلئے تمام متعلقہ فریقین کے درمیان اتفاق رائے پیدا کیا، پائیدار ترقی اور خوشحالی کی منزل تک پہنچنے کے لیے ہماری حکومت کو اب پیچھے مڑ کے نہیں دیکھنا۔ وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان عدم مداخلت کی پالیسی پر یقین رکھتا ہے اور ہماری سرزمین افغانستان کے خلاف استعمال نہیں ہو گی، افغانستان میں جمہوری عمل کی حمایت کرتے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ ہم خطے میں اسلحے کی دوڑ میں شامل نہیں ہونا چاہتے، خطے میں امن و استحکام چاہتے ہیں۔ اس موقع پر برطانیہ کے قومی سلامتی کے مشیر کم ڈیروچ نے کہا کہ ہم پاکستان کی داخلی سلامتی کے مقاصد کی حمایت کرتے ہیں۔ علاوہ ازیں برطانوی قومی سلامتی کے مشیر نے وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار سے ملاقات کی۔

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے چوہدری نثار نے کہا کہ پاکستان نے افغانستان میں غیر جانبدارانہ پالیسی کی پیروی اور بھارت کے ساتھ تعلقات کو بہتر بنانے کی ہمہ جہت علاقائی اپروچ اختیارکی ہے، بعد از 2014 افغانستان میںامن واستحکام کویقینی بنانے کے لیے پاکستان اور افغانستان کوبین الاقوامی برادری کی معاونت سے مل کرکام کرناہوگا۔ مزیدبرآں سرکم ڈیروچ نے مشیر قومی سلامتی سرتاج عزیز سے باضابطہ مذاکرات کیے جس میں دہشتگردی کیخلاف مشترکہ کوششیں جاری رکھنے اور اقتصادی اور دفاعی معاملات سمیت مختلف شعبوں میں تعاون کے فروغ پر اتفاق کیا ہے۔ برطانیہ نے پاکستان کو یقین دلایا ہے کہ وہ سلامتی کے معاملات میں تعاون جاری رہے گا۔

دفترخارجہ کے مطابق قومی سلامتی کے معاملے پر بات چیت پاک برطانیہ سٹریٹجک ڈائیلاگ کا حصہ ہیں۔ برطانوی قومی سلامتی مشیر نے وزیردفاع خواجہ آصف سے بھی ملاقات کی۔ علاوہ ازیںبرطانوی مشیر قومی سلامتی اور چیف آف ڈیفنس اسٹاف جنرل سر نیکولس ہوگٹن نے بری فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف کے ساتھ بھی ملاقات کی۔ ملاقات کے دوران دفاع اور سیکیورٹی تعاون سمیت باہمی دلچسپی کے جامع امور اور علاقائی استحکام سے متعلق اقدامات کا جائزہ لیا گیا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔