پاکستان کو رعایتی نرخوں پر تیل نہیں دیا، روس

مانیٹرنگ ڈیسک  اتوار 18 جون 2023
اس بات پر اتفاق کیا کہ ادائیگی دوست ممالک کی کرنسیوں میں کی جائیگی، وزیرتوانائی
۔ فوٹو فائل

اس بات پر اتفاق کیا کہ ادائیگی دوست ممالک کی کرنسیوں میں کی جائیگی، وزیرتوانائی ۔ فوٹو فائل

ماسکو: روس نے کہاہے کہ پاکستان کو تیل کی خریداری میں کوئی خصوصی رعایت نہیں دی۔

ایک امریکی نشریاتی ادارے کی رپورٹ کے مطابق روس نے کہا ہے کہ اس نے پاکستان کو تیل برآمد کرنا شروع کردیا ہے اور اس کی مد میں چینی کرنسی یوآن کو بطور ادائیگی قبول کرنے پر رضا مندی ظاہر کی۔

روس کے سرکاری میڈیا نے رپورٹ کیا ہے کہ سینٹ پیٹرز برگ میں عالمی اقتصادی کانفرنس کی سائڈ لائن پر صحافیوں سے گفتگو میں ملک کے وزیر توانائی نکولے شولگینوف نے کہا کہ پاکستان کو تیل کی ترسیل شروع ہوگئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں: روسی تیل آنے سے پٹرول 30 روپے لیٹر سستا ہونے کا امکان

ان کے اس بیان نے پاکستانی حکام کے ان دعوؤں پر سوال اٹھا دیے ہیں جن میں کہا گیا تھا کہ رواں سال کے اوائل میں دونوں ممالک کے درمیان ہونے والے معاہدے کے تحت ماسکو نے اسلام آباد کو رعایتی قیمت پر تیل دینے پر اتفاق کیا ہے۔

روسی وزیرِ توانائی سے جب پاکستان کے ساتھ چینی کرنسی میں تجارت سے متعلق سوال کیا گیا تو ان کا کہنا تھا ہم نے اس بات پر اتفاق کیا کہ ادائیگی دوست ممالک کی کرنسیوں میں کی جائے گی۔

یہ بھی پڑھیں: روس خام تیل کی پہلی کھیپ مکمل طور پر پاکستان ریفائنری کو منتقل

انھوں نے اس بات کی بھی تصدیق کی کہ بارٹر سپلائی کے معاملے پر بھی بات چیت ہوئی لیکن اس ضمن میں اب تک کوئی فیصلہ نہیں ہوا ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔