ذیابیطس ٹائپ 2 میں کھانے کے بہترین اوقات کیا ہونے چاہیئں؟

ویب ڈیسک  ہفتہ 5 اگست 2023
[فائل-فوٹو]

[فائل-فوٹو]

ایمسٹر ڈیم: نیدرلینڈز میں ہوئی ایک تحقیق میں ذیابیطس ٹائپ 2 والے مریضوں کیلئے کھانے کا بہترین معمول واضح کیا گیا ہے جس سے خون میں شوگر کی سطح متوازن (کم) رہ سکتی ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق نیدرلینڈز میں ماسٹریشٹ یونیورسٹی میڈیکل سینٹر کے محققین کا اپنے مطالعے میں کہنا تھا کہ صبح 7 بجے ناشتہ اور پھر رات کے 9 بجے ہلکا پھلکا کھانا، یہ کھانے کے درمیان 14 گھنٹے کا وقفہ اگر معمول بنا لیا جائے تو ٹائپ 2 ذیابیطس مریضوں کیلئے انتہائی فائدہ مند ہے۔

ماہرین کا کہنا تھا کہ دو وقت کے کھانے کے درمیان 14 گھنٹے کے وقفے سے جسم روزے کی حالت میں پہنچ جاتا ہے جس کے نتیجے میں خون میں شوگر کی مجموعی سطح کم ہوجاتی ہے۔

علاوہ ازیں اس تحقیق کے نتائج پچھلی تحقیق کے ساتھ بھی مطابقت رکھتے ہیں جس میں ثابت کیا گیا تھا کہ 2 خوراکوں کے درمیان کم مدت کا وقفہ بھی جیسے 8 گھنٹے، موٹاپے کے شکار لوگوں میں چربی جلانے اور انسولین کی حساسیت کو بہتر بنانے کا باعث ہے۔

تاہم اس بات کا خیال رہے کہ ایسے افراد کو اپنی خوراک میں اہم تبدیلیاں کرنے سے پہلے طبی پیشہ ور افراد یا رجسٹرڈ ماہرِ غذا سے مشورہ کرنا چاہیے۔ وہ آپ کی انفرادی ضروریات اور صحت کی موجودہ حالت کی بنیاد پر ہدایت فراہم کریں گے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔