ایرانی وزیر خارجہ کی سعودی عرب آمد؛ اہم فیصلوں کا امکان

ویب ڈیسک  جمعرات 17 اگست 2023
چین کی ثالثی میں سعودی عرب اور ایران کے درمیان 2016 سے منقطع سفارتی تعلقات کی بحالی پر اتفاق ہوا تھا، فوٹو: فائل

چین کی ثالثی میں سعودی عرب اور ایران کے درمیان 2016 سے منقطع سفارتی تعلقات کی بحالی پر اتفاق ہوا تھا، فوٹو: فائل

ریاض: ایرانی وزیر خارجہ حسین امیر عبداللہیان سعودی عرب پہنچ گئے اور اپنے ہم منصب شہزادہ فیصل بن فرحان سے اہم ملاقات کی جس میں دونوں ممالک کے درمیان سفارتی تعلقات کی بحالی کے حوالے سے بات چیت ہوئی۔

عرب میڈیا کے مطابق سعودی عرب اور ایران کے درمیان سفارتی تعلقات کی بحالی کے حوالے سے اہم پیشرفت میں ایرانی وزیر خارجہ سرکاری دورے پر ریاض پہنچ گئے۔

سعودی وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نے اپنے ایرانی ہم منصب حسین امیر عبداللہیان کا پُرتپاک استقبال کیا۔ ملاقات کے بعد دونوں رہنما پریس کانفرنس سے بھی خطاب کریں گے۔

یاد رہے کہ چین کی ثالثی میں سعودی عرب اور ایران کے درمیان 2016 سے منقطع سفارتی تعلقات کی بحالی پر اتفاق ہوگیا تھا جس کے بعد دونوں ممالک نے ایک دوسرے کے یہاں سفیر تعینات کردیے۔

سعودی عرب میں ایک شیعہ عالم کو 2016 میں پھانسی دی گئی تھی جس پر تہران میں سعودی سفارت خانے اور مشھد میں قونصل خانے پر مظاہرین نے دھاوا بول دیا تھا۔ اس واقعے کے بعد سے دونوں کے سفارتی تعلقات منقطع تھے۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔