غیرقانونی پارکنگ، سندھ ہائیکورٹ نے کے ایم سی اور ٹریفک افسران کو طلب کرلیا

کورٹ رپورٹر  ہفتہ 2 دسمبر 2023
فوٹو ؛فائل

فوٹو ؛فائل

 سندھ ہائی کورٹ نے غیر قانونی پارکنگ کے خلاف ڈائریکٹر ٹریفک مینجمنٹ کے ایم سی، ڈائریکٹر ٹریفک مینجمنٹ کے ڈی اے، سیکریٹری لوکل گورنمنٹ، سیکریٹری ٹرانسپورٹ، ڈی آئی جی ٹریفک کو آئندہ سماعت پر طلب کرلیا۔

جسٹس ندیم اختر کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے غیر قانونی پارکنگ کے خلاف درخواست پر تحریری حکم نامہ جاری کیا۔ تحریری حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ پرائیویٹ افراد ٹریفک پولیس کی معاونت سے غیر قانونی پارکنگ چلا رہے ہیں، غیر قانونی پارکنگ کی وجہ سے ٹریفک کے مسائل میں اضافہ ہوتا ہے، سندھ حکومت کا کام ہے کہ پارکنگ کے معاملات کو ریگولیٹ کرے، ان غیر قانونی سرگرمیوں کی وجہ سے عوام متاثر ہوتی ہے۔

عدالت نے ڈائریکٹر ٹریفک مینجمنٹ کے ایم سی، ڈائریکٹر ٹریفک مینجمنٹ کے ڈی اے، سیکریٹری لوکل گورنمنٹ، سیکریٹری ٹرانسپورٹ، ڈی آئی جی ٹریفک کو 5 دسمبر کو طلب کرلیا اور کہا ہے کہ سندھ حکومت کا کام ہے کہ پارکنگ کے معاملات کو ریگولیٹ کرے۔

تحریری حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ بتایا جائے کہ شہر میں غیر قانونی پارکنگ کا دھندہ کیسے چلایا جارہا ہے؟ تمام افسران عدالت میں پیش ہوکر بتائیں کہ غیر قانونی پارکنگ کو کیسے روکا جا سکتا ہے، شہر میں ٹریفک کی روانی ایک اہم مسئلہ ہے، پرائیویٹ افراد ایسی جگہوں کو پارکنگ بناکر استعمال کررہے ہیں جس کی اجازت نہیں ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔