بلوچستان میں مردم شماری کیخلاف اپیل پر اےجی بلوچستان سے جواب طلب

اسٹاف رپورٹر  بدھ 6 دسمبر 2023
سپریم کورٹ نے کیس کی سماعت غیر معینہ مدت کے لیے ملتوی کردی:فوٹو:فائل

سپریم کورٹ نے کیس کی سماعت غیر معینہ مدت کے لیے ملتوی کردی:فوٹو:فائل

 اسلام آباد: سپریم کورٹ نے بلوچستان میں مردم شماری کیخلاف اپیل پر ایڈیشنل اٹارنی جنرل اور ایڈوکیٹ جنرل بلوچستان سے جواب طلب کر لیا۔

جسٹس اعجازالاحسن کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 3 رکنی بنچ نے بلوچستان میں مردم شماری کے خلاف درخواست  کی سماعت کی. جسٹس اعجاز الاحسن نے ریمارکس دیٸے کہ درخواست گزار نے مشترکا مفادات کونسل میں نگران وزرا اعلی کی شمولیت پر اعتراض کیا جس پر ایڈیشنل اٹارنی جنرل عامر رحمن نے عدالت کو بتایا کہ مشترکہ مفادات کونسل سے متعلق سپریم کورٹ کے فیصلے واضح ہیں۔ مردم شماری پر کسی متعلقہ شخص نے اعتراض نہیں کیا۔

جسٹس اعجاز الاحسن نے وکیل کامران مرتضی کو مخا طب کرتے ہوئے کہا کہ اس کا حل  اب یہ ہوسکتا ہے کہ آئندہ آپ لوگ اس وزیر اعلی کو دوبارہ ووٹ نہ دیں جس پرکامران مرتضی نے کہا کہ بلوچستان میں جس طریقے سے وزرا منتخب ہوتے ہیں وہ ایک الگ بحث ہے۔

ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایا کہ8 فروری کو انتخابات سے متعلق کیس میں بھی مشترکا مفادات کونسل کا ذکر ہے جس پر جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ8 فروری کو عام انتخابات سے متعلق کیس کا فیصلہ بھی آئندہ سماعت پر دیکھ لیں گے۔ عدالت نے کیس کی سماعت غیر معینہ مدت کیلئے ملتوی کردی۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔