سینیٹ کی قائمہ کمیٹی نے انسداد دہشت گردی ترمیمی بل کی منظوری دیدی

ویب ڈیسک  جمعـء 30 مئ 2014
کسی بھی کالعدم تنظیم کو نئے نام سے کام کرنے کی اجازت نہیں ہوگی،قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کے اجلاس میں فیصلہ

کسی بھی کالعدم تنظیم کو نئے نام سے کام کرنے کی اجازت نہیں ہوگی،قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کے اجلاس میں فیصلہ

اسلام آباد: سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ نے انسداد دہشت گردی ترمیمی بل کی متفقہ طور پر منظوری دے دی۔

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کا اجلاس سینیٹر طلحہٰ محمود کی صدارت میں ہوا جس میں قائمہ کے دیگر ارکان نے شرکت کی،اجلاس میں کمیٹی نے انسداد دہشت گردی ترمیمی بل کی متفقہ طور پر منظوری دی جبکہ کمیٹی نے یہ بھی فیصلہ کیا کہ کسی بھی کالعدم تنظیم کو نئے نام سے کام کرنے کی اجازت نہیں ہوگی۔ وزارت خزانہ کے حکام نے کمیٹی کو بریفنگ میں بتایا کہ دہشت گردوں کو علاج اور دوران ٹرائل منجمد اکاؤنٹ تک رسائی دی جائے گی۔

اجلاس میں شریک ایم کیوایم کے سینٹر طاہر مشہدی نے کہا کہ کراچی میں آپریشن کے دوران 17 ہزار لوگ پکڑے گئے جن میں سے صرف 5 کو سزا ملی۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں شریف لوگ اندر اور جرائم پیشہ باہر ہیں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔