دور جدید کا ’رابن ہُڈ‘

عبدالریحان  منگل 3 جون 2014
سان فرانسسکو  کے شہریوں میں دولت بانٹ رہا ہے۔  فوٹو : فائل

سان فرانسسکو کے شہریوں میں دولت بانٹ رہا ہے۔ فوٹو : فائل

امریکی شہر سان فرانسسکو  میں اپنے گھروں اور فلیٹوں سے باہر نکلنے  کے بعد لوگوں کی نظریں جھکی  ہوئی ہوتی  ہیں۔

جی نہیں! وجہ یہ نہیں ہے کہ انھیں نگاہیں اٹھا کر ادھر ادھر دیکھنے سے شرم آنے لگی ہے بلکہ وہ زمین پر پڑے ہوئے کسی لفافے کے متلاشی ہوتے ہیں۔ قصہ کچھ یوں ہے کہ سان فرانسسکو  میں دور جدید کے ’ رابن  ہُڈ ‘ نے جنم لیا ہے ، جو شہر کے باشندوں میں دولت تقسیم کررہا  ہے۔ مگر اس کا اسٹائل مشہور زمانہ برطانوی کردار سے ذرا مختلف  ہے۔ وہ لفافے میں ڈالر رکھ کر شہر  کے کسی بھی گوشے میں لفافہ چھپا دیتا ہے۔ لفافے میں کم از کم  پچاس اور زیادہ سے زیادہ دو سو ڈالر ہوتے ہیں۔

دور جدید کا ’ رابن ہُڈ ‘ انٹرنیٹ ٹیکنالوجی کے استعمال سے واقف ہے اور سوشل نیٹ ورک پر بھی فعال ہے۔ ٹویٹر پر اس کا اکاؤنٹ بھی موجود ہے۔ اس نے شہر میں رقم سے بھرے لفافے پھینکنے کا اعلان بھی ٹویٹر ہی پر کیا تھا جس کے بعد ایک ہی ہفتے میں اس کے فالوورز کی تعداد چند سو سے بڑھ کر ایک لاکھ تک پہنچ گئی ہے۔

’ رابن ہُڈ ‘ کا کہنا  ہے کہ وہ ایک سماجی تجربے  کے طور پر بند لفافے شہر کے مختلف حصوں میں پھینک رہا ہے۔ ٹویٹر  پر ٹویٹ کرتے ہوئے اس نے دعویٰ  کیا ہے کہ سان فرانسسکو میں جائیداد کی خریدو فروخت کے کاروبار سے اس نے بے پناہ دولت  کمائی ہے۔ وہ چھپائے گئے لفافوں  کے بارے میں اشارے اپنے ٹویٹر پیج  پر دیتا ہے۔ اب تک دو لوگ ان اشاروں کی مدد سے رقم سے بھرے لفافے ڈھونڈ چکے  ہیں۔ ایک لفافے میں پچاس اور دوسرے میں دوسو ڈالر تھے۔ سان فرانسسکو کے باشندے ’ رابن ہُڈ ‘ کو ٹویٹر پر مسلسل فالو کررہے ہیں اور اس کی جانب سے اشارے ٹویٹ کیے جانے کے بعد رقم کی تلاش میں نکل کھڑے ہوتے ہیں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔