برازیل میں فٹ بال کپ کا عالمی میلا سجنے سے قبل ہی ریلوے ملازمین ہڑتال پرچلے گئے

ویب ڈیسک  جمعـء 6 جون 2014
پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لئے لاٹھی چارج کے ساتھ  آنسو گیس کی شیلنگ بھی کی جس کے نتیجے میں متعدد افراد زخمی ہوگئے۔  فوٹو؛فائل

پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لئے لاٹھی چارج کے ساتھ آنسو گیس کی شیلنگ بھی کی جس کے نتیجے میں متعدد افراد زخمی ہوگئے۔ فوٹو؛فائل

ساؤ پاؤلو: برازیل میں فٹبال ورلڈ کپ شروع ہونے میں صرف 6 روز باقی رہ گئے لیکن عالمی میلا سجنے سے قبل ہی ریلوے ملازمین نے غیر معینہ مدت تک ہڑتال کا اعلان کرتے ہوئے سڑکوں پر نکل آئے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق برازیل کے تجارتی حب ساؤپاؤلو میں ریلوے ملازمین کی جانب سے مطالبات کے حق میں ہڑتال کی جارہی ہے جبکہ ہڑتال کے دوسرے روز سیکڑوں ملازمین سڑکوں پر نکل آئے جس کے باعث میٹروپولیٹن شہر میں ٹریفک کا نظام درہم برہم ہوگیا، مظاہرین نے مرکزی انا روسا اسٹیشن بند کردیا جبکہ پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لئے لاٹھی چارج کے ساتھ  آنسو گیس کی شیلنگ بھی کی جس کے نتیجے میں متعدد افراد زخمی ہوگئے۔

حکام کے مطابق ہڑتالی ملازمین نے میٹرو ٹرین بند کردی جس کے باعث عوام کو شدید مشکلات کا سامنا ہے جبکہ 6 روز بعد عالمی فٹبال ورلڈ کپ کا افتتاحی میچ ساؤپاؤلو میں ہی ہونا ہے تاہم ریلوے ملازمین کی جانب سے ہڑتال کے باعث ٹرانسپورٹ کے لئے متبادل ذرائع پر غور کیا جارہا ہے۔

واضح رہے کہ 12 جون کو میزبان برازیل اور کروشیا کی ٹیموں کے درمیان فٹبال ورلڈ کپ کا افتتاحی میچ ہوگا جس میں اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل بان کی مون، روسی صدر ولادی میرپیوٹن، جرمن چانسلر انجیلینا مرکل سمیت 21 عالمی رہنما شرکت کریں گے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔