سپریم کورٹ کے فیصلے میں قادیانیوں سے متعلق مبہم شقوں کی نشاندہی کردی ہے، اسلامی نظریاتی کونسل

ویب ڈیسک  منگل 5 مارچ 2024
چیئرمین اسلامی نظریاتی کونسل قبلہ ایاز نے کہا کہ سپریم کورٹ فیصلہ جامع بنانے کے لیے تجاویز دی گئی ہیں—فوٹو: اسکرین گریب

چیئرمین اسلامی نظریاتی کونسل قبلہ ایاز نے کہا کہ سپریم کورٹ فیصلہ جامع بنانے کے لیے تجاویز دی گئی ہیں—فوٹو: اسکرین گریب

 اسلام آباد: اسلامی نظریاتی کونسل کے چیئرمین قبلہ ایاز نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ نے شہری کی ضمانت کے فیصلے میں قادیانیوں سے متعلق دی گئی مبہم شقوں کی نشان دہی کرتے ہوئے فیصلے کو جامع بنانے کے لیے تجاویز پیش کردی ہیں۔

اسلام آباد میں اسلامی نظریاتی کونسل کے اجلاس کے بعد چئیرمین قبلہ ایاز نے پریس کانفرنس میں کہا کہ قادیانیوں کے حوالے سے سپریم کورٹ کے حالیہ فیصلے کا کونسل کے اجلاس میں جائزہ لیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ کونسل نے فیصلے کی ان شقوں کی نشان دہی کی جن سے ابہام پیدا ہوا اور کونسل نے فیصلے کو جامع بنانے کے لیے تجاویز بھی پیش کردی ہیں اور یہ تجاویز سپریم کورٹ میں پیش کردی جائیں گی۔

قبلہ ایاز کا کہنا تھا کہ یہ فیصلہ ریویو پٹیشن کے بعد اسلامی نظریاتی کونسل کو رائے کے لیے بھیجا گیا تھا، کونسل نے فیصلے کی ان شقوں کی نشان دہی کی جن سے ابہام پیدا ہوا۔

صحافی کی جانب سے سوال کیا گیا کہ جس ابہام کی نشان دہی ہوگئی ہے وہ کیا ہے، جس پر چیئرمین اسلامی نظریاتی کونسل نے کہا کہ تفصیل سے جائزہ لیا گیا اور جسٹس ظہیر کے فیصلے کے ساتھ ملاکر سپریم کورٹ کے فیصلے کو دیکھا جانا چاہیے۔

قبلہ ایاز نے کہا کہ سپریم کورٹ کے فیصلے میں آیات کا دیا گیا حوالہ برمحل نہیں۔

چیئرمین نظریاتی کونسل کا کہنا تھا کہ یہ اس کونسل کا آخری اجلاس تھا،12 اراکین کی رکنیت ختم ہو رہی ہے،کونسل نے اپنے آخری اجلاس میں قادیانیوں کے بارے میں سپریم کورٹ کے فیصلے کا جائزہ لیا۔

قبلہ ایاز نے پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ کونسل نے نگران وزیراعظم انوار الحق کاکڑ کے خط کے جواب میں حکومت کو گلگت بلتستان میں امن و امن کے حوالے سے تجاویز دی ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ گلگت بلتستان میں امن وامان یقین بنانے کے لیے ایک مؤثر علما بورڈ تشکیل دیاجائے اور یہ علما بورڈ مستقل طور پر اپنا کام جاری رکھے۔

اس موقع پر علامہ طاہر اشرفی نے کہا کہ پاکستان کا آئین اور قانون جتنی آزادی جس کو دیتا ہے وہی ملنی چاہیے، قادیانی غیر مسلم ہیں اور مکہ مدینہ نہیں جاسکتے، بہت سے ممالک میں بھی قادیانی غیر مسلم ہیں۔

علامہ طاہر اشرفی کا کہنا تھا کہ خاتون کے عربی زبان سے ملتے جلتے لباس والے معاملے میں مسلم اور غیر مسلم نے اچھا کردار ادا کیا، پولیس فورس کو کسی مہم کا حصہ نہیں بننا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ ایس پی کو پوری قوم کی ہیرو رہنے دینا چاہیے، چند خواتین لاہور واقعے پر نامناسب راستہ اختیار نہیں کرنا چاہیے۔

علامہ طاہر اشرفی نے کہا کہ اسلامی نظریاتی کونسل رمضان میں ناجائز منافع خوری کے خلاف ایک طرح سے فتوی دیتی ہے۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔