اسرائیل رفح میں فوجی آپریشن فوری طور پر ختم کرے؛ یورپی یونین کا مطالبہ

ویب ڈیسک  بدھ 15 مئ 2024
10 لاکھ پناہ گزینوں کے مسکن پر اسرائیلی کارروائی سے معصوم شہریوں کی ہلاکتوں کی تعداد میں اضافہ ہوگا، یورپی یونین

10 لاکھ پناہ گزینوں کے مسکن پر اسرائیلی کارروائی سے معصوم شہریوں کی ہلاکتوں کی تعداد میں اضافہ ہوگا، یورپی یونین

برسلز: امریکا اور اقوام متحدہ کے بعد اسرائیل کے ایک اور اتحادی یورپی یونین نے بھی رفح میں ایک بڑے فوجی آپریشن کے خلاف خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے عام شہریوں کی ہلاکتوں کی تعداد میں اضافہ ہوگا۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کے سربراہ جوزپ بوریل نے خبردار کیا ہے کہ اگر اسرائیل نے رفح میں اپنی فوجی کارروائی نہ روکی تو اس سے یورپی یونین کے اسرائیل کے ساتھ تعلقات خراب بھی ہوسکتے ہیں۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ رفح میں اسرائیلی فوج کی کارروائی غزہ میں انسانی امداد کی تقسیم میں رکاوٹ بن رہی ہے اور اس سے اندرون شہر نقل مکانی، قحط اور مصائب میں اضافہ ہوگا۔

یاد رہے کہ اسرائیل نے رفح میں پناہ لینے والے 10 لاکھ سے زائد فلسطینیوں کو دوسرے علاقوں میں ہجرت کرنے کا حکم دیا ہے کیوں کہ یہاں وہ بڑا فوجی آپریشن کرے گا۔

جس پر امریکا اور اتحادی ممالک نے بھی اسرائیل پر اس عمل سے باز رہنے پر زور دیا تھا۔ 7 اکتوبر سے جاری اسرائیل جارحیت میں شہید ہونے والے فلسطینیوں کی تعدد 35 ہزار کے قریب پہنچ گئی ہے۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔