داغستان میں یہودی اور مسیحی عبادت گاہوں پر حملہ؛ 23 افراد ہلاک

ویب ڈیسک  پير 24 جون 2024
(فوٹو: ویب ڈیسک ایکسپریس)

(فوٹو: ویب ڈیسک ایکسپریس)

دربنٹ: روس کے شمال میں واقع جمہوریہ داغستان میں یہودی عبادت گاہوں اور گرجا گھروں پر مسلح افراد کے حملے میں پولیس اہلکاروں سمیت 23 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

برطانوی خبر رساں ادارے کی خبر کے مطابق روس کے شمالی قفقاز میں واقع جمہوریہ داغستان میں پینٹیکوسٹ کے آرتھوڈوکس تہوار کے موقع پر مسلح افراد نے دربنٹ اور مکھاچکالا شہروں کو نشانہ بنایا۔

حملہ آوروں نے 2 گرجا گھروں اور 2 یہودی عبادت گاہوں کو اپنا نشانہ بنایا، ایک چرچ اور ایک عبادت گاہ کو نذر آتش بھی کر دیا ہے۔

حملے کے نتیجے میں کم از کم 15 پولیس اہلکار، ایک پادری اور ایک سیکیورٹی گارڈ ہلاک ہوئے ہیں جبکہ حملہ آوروں میں سے 6 پولیس کی فائرنگ سے ہلاک ہو گئے ہیں۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ علاقے میں سرچ آپریشن جاری ہے، اور دہشت گردوں کے مزید ساتھیوں کی تلاش جاری ہے، فی الحال حملہ آوروں کی شناخت کے حوالے سے بتانا قبل از وقت ہو گا۔

ہلاک ہونے والے 15 پولیس اہلکاروں کی تعداد داغستان کے ریپبلکن رہنما سرگئی میلیکوف نے بتائی ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔