دہشت گردی کے خلاف کارروائی کو بلیک میلنگ سے نہیں روکا جاسکتا، شازیہ مری

وقاص احمد  منگل 25 جون 2024
 (فوٹو فائل)

(فوٹو فائل)

 اسلام آباد: پاکستان پیپلزپارٹی کی سیکریٹری اطلاعات شازیہ مری نے پی پی کی جانب سے عزم استحکام آپریشن کی حمایت کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف کارروائی کو بلیک میلنگ سے نہیں روکا جاسکتا۔

ترجمان پیپلزپارٹی شازیہ مری نے عزم استحکام آپریشن کی حمایت کی تصدیق کی اور اجلاس کے بعد غیر رسمی گفتگو میں کہا کہ پارلیمانی پارٹی میں عزم استحکام آپریشن پر بات ہوئی، پیپلزپارٹی دہشتگردی و انتہا پسندی کے خلاف ہے اور ہم نے دہشت گردی کے خلاف بڑی قربانیاں دی ہیں۔

شازیہ مری نے کہا کہ عزم استحکام آپریشن پر سیاسی فریقین کو آن بورڈ نہیں لیا گیا، ہم اس معاملے پر سیاسی ڈائیلاگ چاہتے ہیں اور خواہش ہے کہ حکومت سیاسی فریقین کو عزم استحکام آپریشن پر آن بورڈ لیا جائے تاکہ سیاسی فریق آپریشن کی ذمہ داری لیں۔

مزید پڑھیں: پاکستان پیپلزپارٹی کا آپریشن عزم استحکام کی حمایت کا فیصلہ

مرکزی سیکریٹری اطلاعات نے کہا کہ ریاستی رٹ چیلنج کرنے والوں کو جواب دینا ضروری ہے، بلاول بھٹو عزم استحکام آپریشن کو وقت کی ضرورت سمجھتے ہیں، دہشتگردی کے خاتمے تک شہری خود کو محفوظ تصویر نہیں کر سکتے، اس لیے دہشت گردی کے خلاف آپریشن ضروری ہے۔

اسے بھی پڑھیں: یہ ملک استحکام کے لیے کسی آپریشن کا متحمل نہیں ہوسکتا، پی ٹی آئی

پی پی کی مرکزی ترجمان نے کہا کہ دہشتگردی ،انتہاء پسندی کے خاتمے تک ملک ترقی نہیں کر سکتا، عزم استحکام آپریشن پر فریقین کو اعتماد میں لیا جانا ضروری ہے، عزم استحکام آپریشن کے پلان پر سیاسی جماعتوں سے مشاورت ضروری ہے۔

اسے بھی پڑھیں: عزم استحکام آپریشن سے متعلق غلط فہمیاں پھیلائی جا رہی ہیں، وزیراعظم

انہوں نے مزید کہا کہ ہم سب کو ملکر ملک کو امن کا گہوارہ بنانا ہے کیونکہ قوم نے امن کیلئے 80 ہزار جانوں کا نذرانہ پیش کیا، امن ملک کی ترقی کا ضامن ہے اور اس کے بغیر ملک ترقی نہیں کرسکتا۔

اسکو بھی پڑھیں: آپریشن عزم استحکام، پی ٹی آئی کا قبائل امن جرگہ اور وزیراعلیٰ کا آل پارٹیز کانفرنس بلانے کا فیصلہ

سازیہ مری کا کہنا تھا کہ پیپلزپارٹی دہشتگردی اور انتہا پسندی کے خلاف ہے، دہشتگردوں کے خلاف کارروائی ضروری ہے، اور دہشتگردی کے خلاف کارروائی کو بلیک میلنگ سے روکا نہیں جا سکتا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔