فلوریڈا میں پادری کا ہم جنس پرست شخص کی آخری رسومات ادا کرنے سے انکار

ویب ڈیسک  ہفتہ 9 اگست 2014
ہم جنس پرست کی آخری رسومات ادا نہیں کی جا سکتیں کیوں کہ ہم خدا کے اصولوں کی توہین نہیں کرسکتے، پادری     فوٹو؛فائل

ہم جنس پرست کی آخری رسومات ادا نہیں کی جا سکتیں کیوں کہ ہم خدا کے اصولوں کی توہین نہیں کرسکتے، پادری فوٹو؛فائل

ٹمپا: امریکا کی جنوب مشرقی ریاست فلوریڈا کے پادری نے  ہم جنس پرست ثابت ہونے پر مرنے والے شخص کی آخری رسومات ادا کرنے سے انکار کر دیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکی ریاست فلوریڈا کے علاقے ٹمپا کے نیو ہوپ مشنری بیپٹسٹ چرچ میں 42 سالہ اینواس جولین کی آخری رسومات ادا کی جانی تھی لیکن پاردری نے اینواس جولین کی رسومات ادا کرنے سے اس وقت انکار کر دیا جب انہیں معلوم ہوا کہ متعلقہ شخص ہم جنس پرست ہے۔

نیو ہوپ مشنری بیپٹسٹ چرچ کے پادری نے اینواس جولین کے گھر والوں کو فون کر کے بتایا کہ چرچ کسی کی ذاتی زندگی میں مداخلت نہیں کرتا لیکن اینواس کی آخری رسومات ادا نہیں کی جا سکتیں کیوں کہ ہم خدا کے بندے ہیں اور اس کے اصولوں کی توہین نہیں کرسکتے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔