مٹھی میں غذائی قلت کے باعث ایک اور بچی دم توڑ گئی، 5 ہفتوں میں ہلاکتوں کی تعداد 37 ہوگئی

ویب ڈیسک  بدھ 5 نومبر 2014
اڑھائی سالہ زبیدہ سول اسپتال مٹھی میں زیرعلاج تھی جو غذائی قلت کے باعث جانبر نہ ہوسکی۔ فوٹو؛فائل

اڑھائی سالہ زبیدہ سول اسپتال مٹھی میں زیرعلاج تھی جو غذائی قلت کے باعث جانبر نہ ہوسکی۔ فوٹو؛فائل

تھرپارکر: مٹھی میں غذائی قلت کے باعث مزید ایک اور بچی دم توڑ گئی جس کے بعد 5 ہفتوں میں غذائی قلت کی وجہ سے ہلاک بچوں کی تعداد 37 ہوگئی۔

ایکسپریس نیوزکے مطابق مٹھی کے سول اسپتال میں ڈھائی سالہ بچی زبیدہ دوران علاج دم توڑ گئی جو گزشتہ کئی روز سے زیر علاج تھی، گزشتہ 5 ہفتوں کے دوران ہلاک ہونے والی یہ 37ویں بچی ہے جبکہ سول اسپتال مٹھی میں اب بھی 80 بچے زیر علاج ہیں اور کئی بچوں کو حیدرآباد ریفر کیا جاچکا ہے۔

واضح رہے کہ وزیراعظم نواز شریف، وزیراعلی سندھ سید قائم علی شاہ، سندھ ہائیکورٹ اور وزیر خوراک سندھ کی جانب سے ضلع تھرپارکر میں غذائی قلت کا نوٹس لیا گیا تاہم اس کے باوجود غذائی قلت کے باعث بچوں کی ہلاکتوں کا سلسلہ جاری ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔