ملتان میں 2 مجرموں کو پھانسی دے دی گئی

ویب ڈیسک  بدھ 7 جنوری 2015
دونوں مجرموں کی موت کی تصدیق کے بعد لاشیں لواحقین کے حوالے کر دی گئیں۔ فوٹو: فائل

دونوں مجرموں کی موت کی تصدیق کے بعد لاشیں لواحقین کے حوالے کر دی گئیں۔ فوٹو: فائل

ملتان: سینٹرل جیل میں کالعدم تنظیم سے تعلق رکھنے والے 2 دہشت گردوں کو تختہ دار پر لٹکا دیا گیا۔

سنٹرل جیل ملتان میں قید غلام شبیر عرف ڈاکٹر اور علی احمد عرف شیش ناگ کو علی الصبح پھانسی دی گئی۔ پھانسی کے وقت جیل کی سیکیورٹی کے انتظامات انتہائی سخت کئے گئے تھے اور کسی بھی شخص کو جیل کی جانب جانے کی اجازت نہ تھی۔ دونوں مجرموں کی موت کی تصدیق کے بعد لاشیں ورثاء کے حوالے کر دی گئیں۔

واضح رہے کہ غلام شبیر عرف ڈاکٹر پر ڈی ایس پی خانیوال اور ان کے ڈرائیور جب کہ علی احمد عرف شیش ناگ پر 3 افراد کے قتل کا الزام تھا اور انھیں 2002 میں پھانسی کی سزائیں سنائی گئی تھیں۔ مختلف عدالتوں میں رحم کی اپیلیں مسترد ہونے کے بعد صدر ممنون حسین نے بھی چند روز قبل دونوں کی رحم کی اپیلیں مسترد کر دی تھیں۔ گزشتہ برس 16 دسمبر کو پشاور میں آرمی پبلک اسکول پر ہونے والے حملے کے بعد اب تک 9 مجرموں کو پھانسی دی جا چکی ہے.

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔