گورنر سندھ ڈاکٹرعشرت العباد خان کا مستعفیٰ ہونے پر غور

ویب ڈیسک  جمعرات 19 مارچ 2015
 پارٹی  سطح پر گورنرسندھ سے عہدے سے مستعفٰی ہونے کا نہیں کہا گیا،ذرائع ایم کیوایم  فوٹو: فائل

پارٹی سطح پر گورنرسندھ سے عہدے سے مستعفٰی ہونے کا نہیں کہا گیا،ذرائع ایم کیوایم فوٹو: فائل

 کراچی: گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد نے صولت مرزا کی جانب سے الزام لگائے جانے کے بعد اپنے عہدے سے مستعفی ہونے پر غور شروع کردیا۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق گورنر سندھ ڈاکٹرعشرت العباد خان کے آئندہ 24 سے 48 گھنٹے کے درمیان مستعفی ہونے کا امکان ہے جب کہ ذرائع کا کہنا ہے کہ صولت مرزا کی جانب سے سزائے موت سے قبل ویڈیو بیان میں ان پر لگائے جانے والے الزام  کے بعد اپنے عہدے سے مستعفی ہونے پر غور شروع کردیا ہے۔

دوسری جانب گورنر سندھ ڈاکٹرعشرت العباد خان نے  وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثارعلی خان سے بھی ٹیلی فونک رابطہ کرکے موجودہ صورتحال پر تبادلہ خیال کیا تاہم ایم کیوایم کے ذرائع کا کہنا ہے کہ ابھی پارٹی سطح پر گورنرسندھ سے عہدے سے مستعفٰی ہونے کا نہیں کہا گیا ہے۔

واضح رہے کہ صولت مرزا نے جیل سے اپنے وڈیو بیان میں جہاں ایم کیوایم کی قیادت پر سنگین الزامات عائد کئے تو وہیں ان کا کہنا تھا کہ ایم کیوایم میں گورنر سندھ کے ذریعے مجرموں کو تحفظ دلایا جاتا ہے اور پیپلزپارٹی کے دور میں ہمیں جیل میں سہولیات فراہم کی گئیں۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔