رہنماؤں کے نام ای سی ایل میں ڈالے جانے کی اطلاعات قابل مذمت ہیں، ایم کیو ایم رابطہ کمیٹی

اسٹاف رپورٹر  ہفتہ 21 مارچ 2015
ایم کیوایم اس اقدام کوعدالت میں چیلنج کرے گی اوراس قسم کے ظالمانہ ہتھکنڈوں کے آگے سرنہیں جھکائے گی، رابطہ کمیٹی۔  فوٹو: فائل

ایم کیوایم اس اقدام کوعدالت میں چیلنج کرے گی اوراس قسم کے ظالمانہ ہتھکنڈوں کے آگے سرنہیں جھکائے گی، رابطہ کمیٹی۔ فوٹو: فائل

 کراچی: متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی نے بعض ٹی وی چینلزپر نشرہونے والی خبروں کی شدیدمذمت کی ہے۔

جن کے مطابق ایم کیوایم کی رابطہ کمیٹی کے ارکان حیدرعباس رضوی، قمرمنصور، رکن سندھ اسمبلی رؤف صدیقی اورسابق سینیٹر بابرغوری کانام ای سی ایل میں ڈالنے کاانکشاف کیا گیاہے۔ رابطہ کمیٹی نے اس اقدام کوایم کیوایم کے خلاف جاری انتقامی کارروائیوں کاتسلسل قراردیا۔ ایک بیان میں رابطہ کمیٹی نے کہاہے کہ جماعت اسلامی کے رہنماؤں کے گھروں سے القاعدہ کے بڑے بڑے دہشت گردگرفتار ہوئے، سری لنکاکی ٹیم پرحملہ کرنے والے دہشت گردوںنے منصورہ میں قیام کیا۔

جماعت اسلامی کے رہنماؤں نے کھلے عام فوج کے خلاف بیانات دیے لیکن آج تک جماعت اسلامی کے رہنماؤں یاطالبان دہشت گردوں کے ساتھ بالواسطہ یا بلا واسطہ تعاون کرنے والوں کے نام نہ توای سی ایل میں ڈالے گئے اورنہ ہی آج تک ان کے خلاف اس قسم کی کارروائی کی گئی۔ رابطہ کمیٹی نے کہاکہ ایم کیوایم اس اقدام کوعدالت میں چیلنج کرے گی اوراس قسم کے ظالمانہ ہتھکنڈوں کے آگے سرنہیں جھکائے گی۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔