سابق اٹارنی جنرل عرفان قادر کی وکالت کا لائسنس معطل، توہین عدالت کا نوٹس جاری

نمائندہ ایکسپریس  جمعـء 27 مارچ 2015
  عرفان قادرکا طرز عمل عرصہ دراز سے انتہائی قابل اعتراض اور توہین آمیز ہے،عدالت فوٹو:فائل

عرفان قادرکا طرز عمل عرصہ دراز سے انتہائی قابل اعتراض اور توہین آمیز ہے،عدالت فوٹو:فائل

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے سابق اٹارنی جنرل عرفان قادر کی وکالت کا لائسنس معطل کرکے توہین عدالت میں اظہار وجوہ کانوٹس جاری کردیا ہے۔

عرفان قادر کو عدالت نے ججوں کے ساتھ بد تمیزی کرنے اور وکالت نامہ نہ ہونے کے باوجود بکتر بند گاڑیوں کی خریداری سے متعلق سندھ حکومت کے مقدمے میں پیش ہونے کے الزام میں شوکا ذ نوٹس جاری کیا ہے اور 2 ہفتے میں وضاحت مانگی ہے۔

عرفان قادر کو ججوں کے بارے میں توہین آمیز خط لکھنے کے الزام میں جاری شو کاز کا جواب نہ دینے کا بھی عدالت نے نوٹس لیا ہے اور قرار دیا ہے کہ  عرفان قادرکا طرز عمل عرصہ دراز سے انتہائی قابل اعتراض اور توہین آمیز ہے۔عدالت نے عرفان قادر کا معاملہ باقی مقدمے سے الگ کرکے 2 ہفتے بعد سننے کا فیصلہ کیا ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔