ایسا کام کروں گا کہ دنیا یاد رکھے گی،حادثے کا شکارجرمن طیارے کے معاون پائلٹ کا محبوبہ سے وعدہ

ویب ڈیسک  ہفتہ 28 مارچ 2015
حادثے کا شکار ہونے والے جرمن پائلٹ کے بارے میں نئے انکشاف نے سب کو حیران کردیا ہے۔ فوٹو فائل

حادثے کا شکار ہونے والے جرمن پائلٹ کے بارے میں نئے انکشاف نے سب کو حیران کردیا ہے۔ فوٹو فائل

پیرس: بعض اوقات دنیا میں اپنا نام پیدا کرنے کا جنون انسان کے دل سے انسانیت کا جذبہ بھی ختم کردیتا ہے اور وہ سیکڑوں لوگوں کی جان پر کھیل جاتا ہے ایسا ہی کچھ کیا حادثے کا شکار ہونے والے جرمن طیارے کے معاون پائلٹ نے جس نے کچھ عرصہ قبل اپنی گرل فرینڈ کو متاثر کرنے کے لیے کہا تھا کہ ایک دن وہ ایسا کچھ کرکے دکھائے گا کہ پوری دنیا میرا نام جان جائے گی اور شاید اس نے طیارہ گرا کر ایسا ہی کیا۔

فرانس میں جرمن مسافر طیارے کو ممکنہ طور پرجان بوجھ کر تباہ کرنے والے معاون پائلٹ کی سابقہ دوست سامنے آگئی ہے جس نے جرمن اخبار کو بتایا کہ ایک سال قبل اس معاون پائلٹ آنڈریازلوبٹز نے اس سے کہا تھا کہ وہ ایک دن کچھ ایسا کام کرے گا کہ اس کا نام سب جان لیں گے۔

جرمن اخبار کے مطابق لوبٹز کی سابقہ دوست جو کہ خود بھی فضائی میزبان ہے وہ  گذشتہ برس آنڈریاز لوبٹز کے ساتھ 5 ماہ ہوائی سفر کر چکی ہے اور وہ طیارہ حادثے کی خبر پربہت زیادہ حیران ہوئی تھی۔ ان کا کہنا تھا کہ اگر لوبٹز نے طیارہ جان بوجھ کر گرایا ہے تو اس کی وجہ ان کی صحت کے مسائل تھے، وہ سمجھ چکے تھے کہ ان کا لفتھانزا میں بطور کپتان یا طویل فاصلے تک مسافت کرنے والے پائلٹ بننے کا خواب عملی طور پر ناممکن تھا۔

خاتون کا کہنا تھا کہ اس کے اور لوبٹزکے درمیان علیحدگی ہوچکی تھی کیونکہ یہ واضح ہوتا جا رہا تھا کہ وہ کسی مسئلے کا شکار ہیں، لوبٹز کی گرل فرینڈ نے ایک اور انکشاف کرتے ہوئے کہا کہ معاون پائلٹ لوبٹز کو ڈراؤنے خواب بھی آتے تھے اور اکثر و بیشتر وہ رات کو یہ چیختے ہوئے اٹھ جاتے تھے اور اس دوران “ہم نیچے گر رہے ہیں” کے الفاظ بار بار دہراتے۔

دوسری جانب آنڈریاز لوبٹز نے جس فلائٹ اسکول سے تربیت حاصل کی تھی وہاں پر ان کے ایک ساتھی نے برطانوی نشریاتی ادارے کو بتایا کہ آنڈریاز لوبٹز فرنچ ایلپس کے علاقے میں چھٹیوں میں گلائیڈنگ کے لیے جانے کی وجہ سے اچھی طرح واقف تھے۔

اس سے قبل جرمنی میں استغاثہ کا کہنا تھا کہ معاون کپتان نے اپنی بیماری کی تفصیلات کو ایئرلائن سے چھپایا تھا، استغاثہ کے بقول آندریا لوبٹز کے گھر سے ان کی بیماری سے متعلق بعض پھٹے ہوئے پرچے ملے ہیں جن میں سے بعض پرانے ہیں اور بعض جہاز تباہ ہونے والے دن کے بارے میں ہیں، آندریاز لوبٹز کے بارے میں کہا جا رہا ہے کہ وہ ذہنی بیماری یا ڈپریشن کا شکار تھے، حالانکہ استغاثہ کی جانب سے ان کی بیماری کا نام واضح نہیں کیا گیا ہے۔

ادھر وائس ریکارڈنگ سے موصول ہونے والے ڈیٹا کے مطابق آندریاز لوبٹز نے جان بوجھ کر کاک پٹ کا دروازہ بند رکھا اور آٹھ منٹ تک جہاز کو فرانس کے پہاڑوں میں اتارا جس کے بعد جہاز تباہ ہوگیا۔

واضح رہے کہ فرانس کے علاقے ایلپس میں گر کر تباہ ہونے والے طیارے کے حادثے میں 150 افراد ہلاک ہوگئے تھے جس کے بعد تفتشی کاروں نے معاونٹ پائلٹ کی جانب سے طیارے کو از خود تباہ کیے جانے کا خدشہ ظاہر کیا تھا۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔