ملالہ کاواقعہ ویک اپ کال ہے،نثار،متحدہ کے وفدکی ملاقات

نمائندہ ایکسپریس  بدھ 17 اکتوبر 2012
چوہدری نثارنے اتفاق کیاہے کہ ملالہ کے واقعے پرتمام جماعتوںکاایک موقف ہوناچاہیے، بابر غوری۔ فوٹو: آئی این پی/فائل

چوہدری نثارنے اتفاق کیاہے کہ ملالہ کے واقعے پرتمام جماعتوںکاایک موقف ہوناچاہیے، بابر غوری۔ فوٹو: آئی این پی/فائل

اسلام آباد: پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنمااورقومی اسمبلی میں قائدحزب اختلاف چوہدری نثار نے کہاہے کہ ملالہ کاواقعہ ویک اپ کال ہے۔

افغانستان میں چھپاملا فضل اللہ ملالہ کیس میں ملوث ہے توپھرشمالی وزیرستان میں آپریشن کی کیامنطق ہے؟ پہلے حالات کاجائزہ لینا ہوگا، حکومت نے ایوان کومتفقہ قراردادیں توڑنے والا قبرستان بنادیا ہے کسی قراردادکی کوئی حیثیت نہیں رہی۔قومی اسمبلی میں نکتہ اعتراض پراظہارخیال کرتے ہوئے چوہدری نثارنے کہاکہ بتایاجائے جہاں پہلے آپریشن کیے وہاں اب کیاصورتحال ہے۔چوہدری نثارنے کہاکہ ایک جماعت جنوبی وزیرستان جاناچاہتی تھی لیکن اجازت نہیں دی گئی،ہم نے الزامات کے باوجود ملکی مفادکیلیے ہمیشہ اپناکردار ادا کیا،بتایاجائے منظورشدہ قرارداوں پرکیا ہوا ؟

ہم نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کاتعین ہفتہ وارکرنے سمیت متعددقراردادیں منظورکیں مگر انہیں اپنے منطقی انجام تک نہیں پہنچایاگیا،دہشتگردی کیخلاف یہ ایوان پہلے ہی قرار داد منظورکرچکااس کابھی کچھ نہیں بناحکومت ملک کے مسائل کے حل کیلیے جامع پروگرام لائے گی توہم ساتھ دینگے،بچیوں پر جو حملہ ہوا ہے اس کوسامنے رکھ کر پالیسی تبدیل کی جائے،پوری قوم کی طرف سے جس تحریک کی حمایت ہوگی ہم بھی اس کی بھرپورحمایت کرینگے،قوم پرستوں پروطن دشمنی کے الزامات کا سلسلہ بند ہوناچاہیے اورپارلیمنٹ سے منظورہونیوالی قراردادوں کومنطقی انجام تک پہنچنا چاہیے۔این این آئی کے مطابق چوہدری نثار نے کہاکہ مسلم لیگ ن شمالی وزیرستان میں آپریشن کی حمایت نہیں کریگی۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔