بیکری تشدد کیس: وزیر اعلیٰ پنجاب کے دامادعلی عمران کوضمانت پررہاکردیا گیا

ویب ڈیسک  جمعـء 19 اکتوبر 2012
رعدالت نے 50 ہزارروپے کے مچلکوں کےعوض علی عمران کی ضمانت منظورکرتے ہوئے ان کی رہائی کاحکم دے دیا۔ فوٹو آئی این پی

رعدالت نے 50 ہزارروپے کے مچلکوں کےعوض علی عمران کی ضمانت منظورکرتے ہوئے ان کی رہائی کاحکم دے دیا۔ فوٹو آئی این پی

لاہور: بیکری تشدد کیس میں ملوث وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف کے دامادعلی عمران کی درخواست ضمانت منظور کرتے ہوئے انہیں رہا کردیا گیا۔

کیس کی سماعت جوڈیشل مجسٹریٹ یلماس غنی کی عدالت ميں ہوئی، دوران سماعت علی عمران کے وکلاء نےموقف اختیارکیا کہ ان کے موکل کو اس معاملے میں پھنسایا گیا ہےجبکہ اصل ملزموں کی پہلےہی ضمانتیں منظورہوچکی ہیں جس پرعدالت نے 50 ہزارروپے کے مچلکوں کےعوض علی عمران کی ضمانت منظورکرتے ہوئے ان کی رہائی کاحکم دے دیا۔

واضح رہے کہ لاہور کے علاقے ڈیفنس میں واقع بیکری نہ کھولنے پر وزیراعلی پنجاب شہباز شریف کے داماد کے گارڈز نے بیکری ملازم پر شدید تشدد کیا تھا اورمیڈیا پر اس واقعے کی سی سی ٹی وی فوٹیج جاری ہونے کے بعد وزیراعلیٰ پنجاب کے حکم پر ان کے داماد علی عمران  نے تھانے پہنچ کرگرفتاری دے دی تھی جس پرعدالت نے انہیں 14روزہ جسمانی ریمانڈ پرجیل بھیج دیا تھا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔