نون لیگ غیر قانو نی حکومت پر قوم سے معافی مانگے، دھامرہ

نمائندہ ایکسپریس  اتوار 21 اکتوبر 2012
 اصغر خان کیس میں سپریم کورٹ کا فیصلہ پی پی کے موقف کی تائید ہے، پریس کانفرنس.  فوٹو: فائل

اصغر خان کیس میں سپریم کورٹ کا فیصلہ پی پی کے موقف کی تائید ہے، پریس کانفرنس. فوٹو: فائل

حیدر آباد: پیپلزپارٹی یوتھ ونگ کے مرکزی کوآرڈینیٹر سینیٹر عاجز دھامرہ نے کہا ہے کہ1990ء میں دھاندلی کے ذریعے حکومت بنانے پر سپریم کورٹ نواز شریف کو عدالت طلب کرے۔

جبکہ اس دور میںکیے گئے تمام حکومتی اخراجات بھی نواز شریف اور ان کی جماعت سے وصول کیے جائیں۔ ایم این اے لال چند اکرانی، عبدالرزاق بروہی، لالہ رضوان مغل، جاوید خانزادہ اور دیگر کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے ان کا کہنا تھاکہ سپریم کورٹ کے اصغر خان کیس میں فیصلے نے پیپلزپارٹی کے اس موقف کی تائید کردی ہے کہ 1990 ء کے عام انتخابات میں دھاندلی کی گئی اور امانت میں خیانت کرتے ہوئے غیر قانونی حکومت قائم کر کے عوام کے حقوق پر ڈاکا ڈالا گیا۔ انھوں نے کہا کہ نون لیگ کو 1990ء میں غیرقانونی حکومت بنانے پر قوم سے معافی مانگنی چاہیے۔

ذوالفقار بھٹو اوربے نظیربھٹو کو اس لیے شہید کیا گیا تاکہ پیپلزپارٹی کو نیست ونابود کردیا جائے لیکن پی پی آج بھی زندہ وجاوید ہے جبکہ اسے مٹانے کے خواب دیکھنے والوں کا کوئی نام تک لینے والا نہیں۔ انھوں نے سپریم کورٹ سے اپیل کی کہ 1990 ء میں دھاندلی کے ذریعے بنائی گئی غیرقانونی حکومت کے فیصلوں کی آئینی وقانونی حیثیت بھی واضح کی جائے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔