بھارت میں فوجی اہلکاروں نے چلتی ٹرین میں 14 سالہ لڑکی کو زیادتی کا نشانہ بناڈالا

ویب ڈیسک  منگل 29 دسمبر 2015
لڑکی کے طبی معائنے کے بعد زیادتی کی تصدیق ہوچکی ہے، پولیس ،فوٹو:فائل

لڑکی کے طبی معائنے کے بعد زیادتی کی تصدیق ہوچکی ہے، پولیس ،فوٹو:فائل

کولکتہ: بھارت میں مرتسر ایکسپریس میں فوجیوں کے لئے مختص بوگی میں 2 فوجی 14 سالہ لڑکی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد فرار ہوگئے جب کہ ایک اہلکار کو حراست میں لے لیا گیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق جھارکھنڈ کے مادھوپوراسٹیشن پر ریسکیو ٹیم نے 14 سالہ لڑکی کو فوجیوں کے لئے مخصوص بوگی سے ریسکیو کیا جسے 2 فوجی اہلکاروں کی جانب سے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا تھا جب کہ ریلوے پولیس نے مخصوص ڈبے میں موجود ایک اہلکار کو حراست میں لے لیا جس کی شناخت مانچرش تری پاتھی کے نام سے ہوئی ہے۔ پولیس کے مطابق لڑکی کو زیادتی کا نشانہ بنائے جانے کی اطلاع پر مادھوپور اسٹیشن پر پہلے سے ہی اہلکارالرٹ تھے جنہوں نے ٹرین اسٹیشن پہنچنے پر ملٹری ٹرین میں داخل ہونے کی کوشش کی تاہم ٹرین بوگی کا دروازہ اندر سے لاک تھا جسے کوشش کے بعد کھول دیا گیا اوروہاں موجود ایک فوجی کو گرفتار جب کہ لڑکی کو تحویل میں لے لیا گیا۔

14 سالہ لڑکی کا کہنا ہے کہ اسے 3 اہلکاروں نے ہراساں کیا جب کہ گرفتار شخص نے شراب پلائی جس کے بعد دیگر 2 اہلکاروں نے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا۔ پولیس کے مطابق سی سی ٹی وی فوٹیج حاصل کرلی گئی ہے جب کہ لڑکی کے طبی معائنے کے بعد زیادتی کی تصدیق ہوچکی ہے تاہم زیادتی کرنے والے دونوں فوجیوں کی گرفتاری کے لئے کوششیں تیز کردی گئی ہیں۔

 

 

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔